بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

24-May-2019

پی آئی اے ہیڈ کوارٹر کی اسلام آباد منتقلی کیخلاف سینیٹ میں قرارداد منظور

87 Views 0 2 ہفتے
Posted at 13 مئی-2019

اسلام آباد۔ وفاقی دارالحکومت کا قیام تمام قومی اداروں کو سیکیورٹی کے لحاظ سے فول پروف بنانے کیلئے عمل میں لایاگیا۔ تمام اہم قومی ادارے اسلام آباد منتقل ہو گئے مگر قومی ائرلائن پی آئی اے کا ہیڈ کوارٹر ہنوز کراچی میں ہی ہے۔

پی ٹی آئی حکومت نے اقتدار میں آنے کے بعد فوری بعد پی آئی اے ہیڈ کوارٹر کو اسلام منتقل کرنے کی تیاری کر لی تھی مگر اب سینیٹ میں پی آئی اے ہیڈ کوارٹر کی کراچی سے اسلام آباد منتقلی کیخلاف قرارداد منظور کر لی گئی ہے۔ یہ قرارداد اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے پیش کی گئی۔


ون یونٹ رویہ برداشت نہیں کیا جائیگا

تاہم حکومت اور اتحادی جماعتوں کی جانب سے قرارداد کی مخالفت کی گئی۔ قرارداد میں کہا گیا ہے کہ ایوان ہیڈ کوارٹر کی اسلام آباد منتقلی کی تجویز کی مخالفت کرتا ہے۔ پی پی کی نائب صدر شیریں رحمان کا کہنا ہے کہ دال میں کچھ کالا ضرور ہے۔ ون یونٹ رویہ برداشت نہیں کیا جائیگا۔

کراچی کمرشل حب ہے بند گلی میں نہ دھکیلا جائے

جناح ائرپورٹ ملک کا سب سے بڑا ائرپورٹ ہے اور رہے گا۔ کراچی کمرشل حب ہے اسے بند گلی میں نہ دھکیلا جائے ورنہ قومی یک جہتی کو نقصان پہنچے گا۔ مسلم لیگ کے نائب صدر مشاہد اللہ کا کہنا تھا کہ اگر قومی ائرلائن کا ہیڈ آفس اسلام آباد منتقل کیا گیا تو نیا پنڈورا بکس کھل جائیگا۔

متعلقہ خبریں

فلمسٹار سنی دیول، ہیمامالنی اور کرکٹر گوتم گھمبیر…

نئی دہلی۔ بھارتی لوک سبھا کے انتخابات کے نتائج سامنے آ چکے ہیں۔ بھارتی میڈیا کے مطابق بی…

13 گھنٹے
فلمسٹار سنی دیول، ہیمامالنی اور کرکٹر گوتم گھمبیر بھی جیت گئے

رواں ہفتے کے آخر میں مزید گرمی کی…

کراچی۔ شہر قائد کراچی میں محکمہ موسمیات نے ایک مرتبہ پھر ہیٹ الرٹ جاری کر دیا ہے۔ رواں…

14 گھنٹے
رواں ہفتے کے آخر میں مزید گرمی کی پیش گوئی

یونس ڈھاگہ کی جگہ نوید کامران سیکرٹری خزانہ…

اسلام آباد۔ وزیراعظم عمران خان کی معاشی ٹیم میں تبدیلیوں کا سلسلہ ہنوز جاری ہے۔ پہلے پی ٹی…

15 گھنٹے
یونس ڈھاگہ کی جگہ نوید کامران سیکرٹری خزانہ بن گئے

پنجاب پولیس میں پھر سیاسی مداخلت شروع

لاہور۔ پنجاب پولیس میں ایک مرتبہ پھر سیاسی مداخلت شروع ہو گئی ہے۔ پاک پتن واقعہ کے بعد…

15 گھنٹے
ایس ایچ او کی تھانے میں چیخ و پکار کہ یہ میرے ساتھ زیادتی ہے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے