بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

18-August-2019

شہباز شریف سیاست چھوڑنے کو تیار تھے۔ جاوید چوہدری

317 Views 0 3 مہینے
Posted at 17 مئی-2019

نامور صحافی جاوید چوہدری نے دعوی کیا ہے کہ نیب چیئرمین جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے انہیں بتایا کہ شہباز شریف کلین چٹ ملنے پر کرپشن کی رقم واپس کرنے کو تیار تھے مگر ان کی شرط تھی کہ حمزہ شہباز کو وزیر اعلی پنجاب بنایا جائے۔

شہباز شریف کی تین شرائط یہ تھیں

جاوید چوہدری نے نیب چیئرمین کے ساتھ ملاقات کے حوالے سے اپنے دو کالم لکھے انہوں نے واضح کیا کہ 14 مئی کو نیب چیئرمین کے ساتھ ملاقات میں مختلف امور پر بات چیت ہوئی۔ جاوید چوہدری کے مطابق نیب چیئرمین نے انہیں بتایا کہ میاں شہباز شریف سیاست سے ریٹائرڈ اور رقم واپس کرنے کو تیار تھے مگر انہوں نے تین شرائط رکھی۔ پہلی شرط یہ کہ رقم کوئی دوسرا ملک پاکستان کے اکاؤنٹ میں جمع کرائے گا۔ دوسرا انہیں کلین چٹ دی جائے اور تیسری شرط حمزہ شہباز شریف کو وزیر اعلی پنجاب بنانا۔ انہوں نے بتایا کہ میاں نواز شریف اور شریف خاندان بھی ایسی ہی پیش کش کے لئے تیار تھے

نیب چیئرمین نے معروف صحافی کو بتایا کہ میاں نواز شریف کی حکومت کے آخری دور میں انہیں ریٹائرمنٹ کا کہا گیا بدلے میں صدر پاکستان بنانے کی آفر ہوئی مگر انہوں نے انکار کردیا۔ انہوں نے کہا کہ کیسسز بند کرنے کے لیئے انہیں پانچ ارب روپے دینے کی پیش کش ہوئی اور انکار پر بم سے اڑانے کی دھمکی ملی اور یہ دھمکی لینڈ گریبرز اور سیاسی حلقوں سے مشترکہ تھی۔

جاوید چوہدری کا روزنامہ ایکسپریس میں چھپنے والے کالم کا خاکہ

حکومت عمران خان ہیلی کاپٹر کیس کو ختم کرانا چاہتی ہے

جاوید چودھری نے انکشاف کیا کہ نیب چیئرمین کے مطابق اگر حکومتی اتحادیوں کے خلاف بھی کرپشن کے کیسز بتدریج کھلتے گئے تو حکومت دس منٹ میں گر سکتی ہے۔ نیب چیئرمین نے جاوید چوہدری کو بتایا کہ حکومتی حلقوں کی جانب سے بھی ان پر بھرپور دباؤ ہے کہ عمران خان، علیم خان، بابراعوان، فردوس عاشق اعوان اور پرویز خٹک کے کیسسز کو بند کیا جائے مگر نیب ایسا نہیں کرے گا۔ جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے صحافی جاوید چوہدری کو بتایا کہ انٹیلی جنس اداروں کے مطابق ان کی جان کو خطرہ بھی ہے مگر وہ اپنے مشن سے نہیں ہٹے گے۔

نیب چیئرمین نے کہا کہ یہ تاثر غلط ہے کہ نیب صرف سیاستدانوں اور تاجروں کے خلاف کاروائی کر رہا ہے رائل پام گالف کلب کیس میں آئی ایس آئی کے سابق سربراہ جنرل ریٹائرڈ جاوید اشرف کے خلاف بھی کیس بنایا گیا۔

نیب نے جاوید چوہدری کے کالم کی تردید کردی

مگر اصل کہانی اب شروع ہوتی ہے نیب کی جانب سے ایک پریس ریلیز جاری ہوئی جس میں یہ واضح کیا گیا کہ جاوید چوہدری کے دونوں کالم غلط حقائق پر مشتمل ہیں نیب چیئرمین کے ساتھ ان کی ملاقات میں ایسا کچھ بھی ڈسکس نہیں ہوا۔ نیب نے واضح کیا کہ وہ کسی کو بھی کوئی آفر نہیں دے سکتے جو فیصلہ کرنا ہے عدالت نے کرنا ہے اور حکومت کی جانب سے نیب چیئرمین کو مکمل سکیورٹی دی جا رہی ہے۔

متعلقہ خبریں

اپوزیشن جماعتوں کی آل پارٹیز کانفرنس پھر طلب…

اسلام آباد۔ مقبوضہ کشمیر کا خصوصی درجہ تبدیل کرنے، اپوزیشن رہنماؤں کی گرفتاری پر نیا لائحہ عمل بنانے…

1 دن
اپوزیشن جماعتوں کی آل پارٹیز کانفرنس پھر طلب کر لی گئی

شیخ رشید انگلینڈ میں بھارت کے خلاف احتجاج…

بھارت کے یوم آزادی پر ہزاروں لوگ جب لندن میں بھارتی ہائی کمیشن کے باہر احتجاجی مظاہرہ کر…

2 دن

عثمان بزدار نے عید پر قیدیوں کے ساتھ…

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے عید کا پہلا روز چار شہریوں کے ہنگامی دورے کئیے، سینٹرل جیل بہاولپور…

6 دن

زرداری کی بہن کو آدھی رات جیل منتقل…

سابق صدر آصف علی زرداری کی بہن فریال تالپور کو رات گئے ہسپتال سے جیل منتقل کرنے پر…

6 دن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے