بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

20-September-2021

سپریم کورٹ نے ہفتہ اور اتوار کو مارکیٹیں کھولنے کا حکم واپس لے لیا

Iqra Khan Iqra Khan
63 Views 0 1 سال
Pakistan Today
Posted at 8 جون-2020

سپریم کورٹ نے ملک میں کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر ہفتے اور اتوار کو مارکیٹیں کھولنے کا حکم واپس لے لیا ہے۔

سپریم کورٹ میں چیف جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں 4 رکنی بینچ نے کورونا وائرس ازخود نوٹس کیس کی سماعت کی۔

دوران سماعت چیف جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دیئے کہ حکومت نے تاحال کورونا سے تحفظ کیلئے قانون سازی نہیں کی، جس پر اٹارنی جنرل نے کہا کہ صوبوں کی جانب سے قانون سازی کی گئی ہے۔

کورونا سے تحفظ کیلئے کوئی قانون سازی ہونی چاہئے

چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ قومی سطح پر بھی کورونا سے تحفظ کیلئے کوئی قانون سازی ہونی چاہئے، قومی سطح پر قانون سازی کا اطلاق پورے ملک پر ہوگا۔

کورونا وائرس ازخود نوٹس پر وفاقی حکومت نے سپریم کورٹ میں جواب جمع کرادیا
جسٹس گلزار احمد نے کہا کہ ملک کے تمام ادارےکام کر سکتے ہیں تو پارلیمنٹ کیوں نہیں کر سکتی؟

جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ نہیں معلوم کورونا مریضوں کی تعداد کہاں جا کر رکے گی۔

کورونا وائرس کسی صوبے میں تفریق نہیں کرتا

انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کسی صوبے میں تفریق نہیں کرتا اور لوگوں کو مار رہا ہے، وفاقی حکومت کو اس معاملے پر لیڈ کرنا چاہئے، وفاقی حکومت کورونا سے بچاو کیلئے قانون سازی کرے۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ قانون سازی کے حوالے سے تاحال کچھ نہیں ہوا، چین نے وبا سے نمٹنے کیلئے فوری قوانین بنائے۔

موجودہ حالات میں لوگوں کی زندگی کو خطرات لاحق ہیں

جسٹس گلزار احمد نے کہا کہ عدالت لوگوں کے بنیادی حقوق کی بات کررہی ہے، زندگی کا تحفظ سب سے بڑا بنیادی حق ہے، موجودہ حالات میں لوگوں کی زندگی کو خطرات لاحق ہیں۔ پریس کانفرنس کے ذریعے لوگوں کی زندگیوں کا تحفظ نہیں ہوگا، تحفظ قانون کے بننے اور اس پرعمل سے ہوگا۔

ہمارے پاس زیادہ وقت نہیں رہا

جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دیئے کہ وقت سب سے بڑا اثاثہ ہے، وقت کسی کا انتظار نہیں کرتا، ہمارے پاس زیادہ وقت نہیں رہا۔

اٹارنی جنرل آف پاکستان نے عدالت سے کہا کہ حکومت کو قانون سازی کی تجویز دوں گا۔

چیف جسٹس نے کہا کہ ہم بھی کورونا وائرس کی حدت کو محسوس کر رہے ہیں جبکہ جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دیئے کہ ڈاکٹرز کو حفاظتی سامان ہر حال میں دستیاب ہونا چاہئے۔

جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی نے کہا کہ وفاقی حکومت کی ذمہ داری بہت زیادہ ہے، کورونا سے تحفظ کا حل قانون سازی ہے اور قانون سازی کرنا وفاقی حکومت کے حق میں ہے۔

حفاظتی سامان نہ ہونے سے کوئی نقصان ہوا تو تلافی نہیں ہوگی

جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دیئے کہ خدانخواستہ حفاظتی سامان نہ ہونے سے کوئی نقصان ہوا تو تلافی نہیں ہوگی، ورکرزکی ہلاکت پر وزیراعلیٰ جاکر معاوضے کا اعلان کر دیتے ہیں، عدالت ایسی چیزوں کی صرف نشاہدہی کرسکتی ہے، قانون سازی کے عملی اقدامات ہر حال میں حکومت نے کرنے ہیں۔

سپریم کورٹ نے وفاقی حکومت کو کورونا سے بچاو کیلئے اقدامات کرنے کے احکامات جاری کرتے ہوئے کورونا ازخود نوٹس کی سماعت دو ہفتوں کیلئے ملتوی کر دی۔

متعلقہ خبریں

پلازمہ فروخت کرنیوالوں کیخلاف کارروائی کی جائے، لاہور ہائیکورٹ

لاہور ہائیکورٹ نے پلازمہ فروخت کرنیوالوں کیخلاف کارروائی کا حکم دے دیا۔ لاہور ہائیکورٹ میں کورونا مریضوں کا…

1 سال

سپریم کورٹ نے جسٹس فائز عیسیٰ کیخلاف صدارتی ریفرنس کالعدم قرار دیدیا

سپریم کورٹ نے اپنے مختصرفیصلے میں جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کے خلاف صدارتی ریفرنس خارج کر دیا ہے۔…

1 سال

لندن میں عمران خان کی 6 اور شہزاد اکبر کی 5 جائیدادیں…

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے سپریم کورٹ میں صدارتی ریفرنس کے خلاف درخواست میں مزید دستاویزات جمع کرا…

1 سال

بینظیربھٹو پرالزام تراشی، امریکی خاتون بلاگر پرمقدمہ درج کرنے کا حکم

عدالت نے وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) کو سابق وزیراعظم بینظیر بھٹو پر الزام تراشی کرنے والی…

1 سال

تازہ ترین

وبا کے دوران قربانی کے بارے میں احکامات

مرکزی رویت ہلال کمیٹی کے چیئرمین اور معروف عالم دین مفتی منیب الرحمان کا کہنا ہے کہ قربانی…

1 سال

سروسز اسپتال لاہورمیں نرسز کی لڑائی میں چھریوں کے وار، متعدد زخمی

اس وقت پورا ملک کورونا وائرس کی وبا کے باعث پریشان نظر آ رہا ہے اور پوری عوام…

1 سال

یونس خان نے میرے گلے پر چاکو رکھ دیا تھا، گرانٹ فلاور…

پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق بیٹنگ کوچ گرانٹ فلاور نے یونس خان کے رویے کے بارے میں بڑا…

1 سال

پنجاب حکومت نے آٹے کی قیمت میں بڑی کمی کر دی

پنجاب حکومت نے آٹے کی قیمت میں کمی کر دی ہے۔ پنجاب کابینہ نے گندم کی عبوری پالیسی…

1 سال

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے