بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

19-September-2019

سپریم کورٹ کو احتساب پر سیاسی انجینئرنگ کے تاثر پرگہری تشویش

52 Views 0 1 ہفتہ
سپریم کورٹ کو احتساب پر سیاسی انجینئرنگ کے تاثر پرگہری تشویش
GEO
Posted at 11 ستمبر-2019

اسلام آباد۔ آصف سعید کھوسہ نے چیف جسٹس آف پاکستان کا عہدہ سنبھالتے ہی سوموٹو ایکشن سیپرہیز اور اپنے ادارے میں بہتری لانے کا عندیہ دیکر درست سمت کا انتخاب کیا۔ ان کا سپیڈی کورٹ کا تجربہ انتہائی شاندار رہا ہے۔ اس کے بہترین نتائج سامنے آ رہے ہیں۔ اب نئے عدالتی سال کی تقریب کے دوران اپنے خطاب میں مزید کہا کہ ہم آئین اور قانون کے مطابق اپنا کردار ادا کرنے کیلئے پرعزم ہیں۔

Courtesy Geo

کسی کے مطالبے پر لیا گیا سوموٹو نہیں ہوتا

ہم بطور ادارہ اس تاثر کو کہ ملک میں جاری احتساب سیاسی انجینئرنگ کو انتہائی خطرناک سمجھ رہے ہیں۔ عدالتی عمل میں دلچسپی رکھنے والے درخواست دائر کریں۔ اسے سن کر صحیح فیصلہ کر سکیں۔ انہوں نے کہا کہ سوموٹو کا اختیار قومی اہمیت کے معاملے پر استعمال کیا جائیگا۔ کسی کے مطالبے پر لیا گیا سوموٹو نہیں ہوتا۔

اس بات سے بخوبی آگاہ ہوں کہ سوسائٹی کا ایک طبقہ جوڈیشل ایکٹو ازم میں دلچسپی نہ لینے پر خوش نہیں ہے۔ یہی طبقے چند ماہ پہلے جوڈیشل ایکٹو ازم پر شدید تنقید کرتا تھا۔ ہم نے پہلے اپنے گھر کو درست کرنے کا فیصلہ کیا۔ ہم یہ سمجھتے ہیں کہ از خود نوٹس پر عدالتی گریز زیادہ محفوظ اور کم نقصان دہ ہے۔ گزشتہ عدالتی سال کے آغاز پر ملک بھر کی عدالتوں میں زیر التوا مقدمات کی تعداد اٹھارہ لاکھ سے زائد تھی۔

گزشتہ سال زیر التوا مقدمات کی تعداد اٹھارہ لاکھ تھی

اب یہ تعداد کم ہو کر 17 لاکھ سے تھوڑا اوپر ہے۔ از خود نوٹس کے استعمال سے متعلق آئندہ فل کورٹ میٹنگ تک مسودہ تیار کر لیا جائیگا۔ اس معاملے کو ہمیشہ کیلئے حل کرنا چاہتے ہیں۔ چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ آئین صدر مملکت کو اس بات کا اختیار دیتا ہے کہ وہ کونسل کے کسی جج کے کنڈکٹ کی تحقیقات کی ہدایت کرے۔

سپریم جوڈیشل کونسل اس طرز کی آئینی ہدایات سے صرف نظر نہیں کر سکتی۔ صدر مملکت کی کسی جج کیخلاف شکایت سپریم جوڈیشل کونسل کی رائے پر اثر انداز نہیں ہوتی۔ سپریم جوڈیشل کونسل کے تمام ممبران اور چیئرمین اپنے حلف پر قائم ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ اختلافی آواز کو دبانے کے حوالے سے بھی آوازیں اٹھ رہی ہیں۔

کسی کی بھی آواز دبانا بداعتمادی کو جنم دیتا ہے اور بداعتمادی سے پیدا ہونیوالی بے چینی جمہوری نظام کیلئے خطرہ ہے۔ ہم بطور ادارہ اس تاثر کو ملک میں جاری احتساب، سیاسی انجینئرنگ کو بہت خطرناک سمجھ رہے ہیں۔ اس تاثر کو ختم کرنے کیلئے اقدامات کئے جائیں۔

متعلقہ خبریں

وفاقی ٹیکس محتسب مشتاق سکھیرا بحال ہو گئے

اسلام آباد۔ اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے وفاقی ٹیکس محتسب مشتاق کی بحالی…

9 گھنٹے
وفاقی ٹیکس محتسب مشتاق سکھیرا بحال ہو گئے

نوازشریف کی رہائی کے بڑے دعوے دھرے رہ گئے

اسلام آباد۔ العزیزیہ سٹیل ملز ریفرنس میں سزا کیخلاف نوازشریف کی درخواست پر سماعت 7 اکتوبر تک ملتوی…

1 دن
نوازشریف کی رہائی کے بڑے دعوے دھرے رہ گئے

جسٹس فائزعیسٰی درخواست کی سماعت کرنیوالا بنچ ٹوٹ گیا

اسلام آباد۔ جسٹس قاضی فائز عیسٰی کی درخواست کی سماعت کرنیوالا بنچ ٹوٹ گیا۔ لارجر بینچ کے سربراہ…

1 دن
جسٹس فائز عیسٰی درخواست کی سماعت کرنیوالا بنچ ٹوٹ گیا

مریم نواز جیت گئی، پی ٹی آئی کو بڑی ہار

الیکشن کمیشن نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کی بیٹی مریم نواز کو مسلم لیگ ن کی نائب…

2 دن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے