بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

26-February-2020

حافظ سعید کو غیر قانونی فنڈنگ کیس میں 11 برس قید کی سزا

Tariq Tariq
40 Views 0 2 ہفتے
حافظ سعید کو غیر قانونی فنڈنگ کیس میں 11 برس قید کی سزا
The Hindu
Posted at 12 فروری-2020

  انسداد دہشت گردی عدالت لاہور نے امیر جماعت الدعوہ حافظ محمد سعید کو دہشت گردی کے مقدمے میں 11 سال قید اور 30 ہزار روپے جرمانے کی سزا سنادی۔

لاہور میں انسداددہشتگردی کی خصوصی عدالت کے جج  ارشد حسین بھٹہ نے امیر جماعت الدعوہ حافظ محمد سعید کے خلاف دو کیسز میں محفوظ فیصلہ سنا دیا۔

عدالت نے حافظ سعید سمیت دو ملزمان کو ٹرائل مکمل ہونے پر ساڑھے پانچ پانچ سال قید اور 15، 15 ہزار روپے جرمانے کی سزا کا حکم دیا ہے۔ عدالت نے مجموعی طور پر حافظ سعید کو 11 سال قید اور 30 ہزار روپے جرمانے کی سزا سنائی۔

کالعدم جماعتہ العدعوہ کے سربراہ حافظ سعید کو ملک بھر میں ایک دینی اور سماجی شعبے کی متحرک ترین شخصیت سمجھا جاتا ہے۔ اس کا اعتراف کئی مرتبہ کیا گیا مگر حافظ سعید ہمیسایہ ملک بھارت اور امریکہ کی آنکھوں میں ہمیشہ کھٹکتے رہے۔

بھارت نے اپنیہاں ہونیوالی دہشت گردی کی وارداتوں کا الزام ہمیسہ حافظ سعید کی جماعتہ الدعوہ کے سر پر تھوپا۔حافظ سعید کو کئی مقدمات میں نامزد کیا گیا۔ ان میں غیر ملکی فنڈنگ کے دو کیسز میں انسداد دہشت گردی کی عدالت کے جج ارشد حسین بھٹہ نے مجموعی طور پر 11 سال قید کی سزا سنا دی۔کالعدم تنظیم چلانے پر عدالت کی جانب سے انہیں چھ، چھ ماہ قید کی مزید سزا بھی سنائی گئی۔

مقدمے کی پیروی کرنیوالے ایڈووکیٹ عبدالرؤف وٹو کا کہنا ہے کہ حافظ سعید اور ان کے دست راست ظفر اقبال پر دہشت گرددوں کو فنڈز فراہم کرنے کا جرم ثابت ہونے پر سزا سنائی گئی۔ ان کیخلاف دو مقدمات ایک گوجرانوالہ اور دوسرا لاہور کی کاؤنٹر ٹیر رازم ڈیپارٹمنٹ نے دائر کیا تھا۔ دونوں مقدمات میں 23 گواہان نے اپنے بیانات قلمبند کرائے۔

عبدالرؤف وٹو نے مزید بتایا کہ حافظ سعید پر دہشت گردی کیلئے فنڈز اکٹھے کرنے اور ان فنڈز سے جائیدادیں خریدنے اور دہشت گردی کیلئے استعمال کرنے کے الزامات ہیں۔

واضح رہے بھارت اور امریکہ نے بھی کئی مرتبہ حافظ سعید کو قانون کے شکنجے میں لانے کا مطالبہ کیا تھا۔ عالمی مالیاتی ادارے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کی جانب سے بھی پاکستان میں کام کرنیوالی دہشت گردی میں ملوث تنظیموں اور اشخاص میں ان کا نام بھی شامل تھا۔

حکومت پاکستان کی جانب سے جولائی 2019 میں 23 مقدمات درج کئے گئے جن میں 13افراد کو نامزد کیا گیا۔ ان میں سے 11 مقدمات میں کالعدم جماعت الدعوہ کے سربراہ حافظ سعید کو نامزد کیا گیا تھا۔ ان پر ایک الزام یہ بھی ہے کہ انہوں نے پانچ ایسے ادارے دعوت و الاشاد ٹرسٹ، معاذ بن جبل ٹرسٹ، الانفال ٹرسٹ، الحمد ٹرسٹ اور المدینہ فاؤنڈیشن ٹرسٹ قائم کر رکھے ہیں جو براہ راست دہشت گردی کیلئے رقم فراہم کرتے رہے۔دونوں مقدموں کی سماعت روزانہ کی بنیاد پر ہوئی۔

واضح رہے دوسری جانب ایف اے ٹی ایف کا آئندہ اجلاس 14 فروری کو ہو رہا ہے۔ اس میں پاکستان کی جانب سے دہشت گردی کیلئے ہونیوالی فنڈنگ کیخلاف اقدامات کی رپورٹ عالمی مالیاتی ادارے کو پیش کی جائے گی۔ واضح رہے سابق صدر پرویز مشرف نے حافظ سعید اور ان کی جماعت کو ملک میں آنیوالی قدرتی آفات کے دوران ملک کی سب سے متحرک اور محب وطن تنظیم قرار دیا تھا۔

متعلقہ خبریں

جعلی اکاونٹس کیس کے مرکزی ملزم عبدالغنی مجید کی ضمانت منظور

اسلام آباد ہائیکورٹ نے جعلی اکاونٹس کیس کے مرکزی ملزم عبدالغنی مجید کی ضمانت منظور کر لی ہے…

2 گھنٹے
جعلی اکاونٹس کیس کے مرکزی ملزم عبدالمجید غنی کی ضمانت منظور

غداری کیس، خصوصی عدالت کی تشکیل کالعدم قرار دینے کا فیصلہ چیلنج

سندھ ہائیکورٹ بار کی جانب سے سنگین غداری کیس کی سماعت کرنے والی خصوصی عدالت کی تشکیل کالعدم…

1 دن
سنگین غداری کیس میں خصوصی عدالت کی تشکیل کالعدم ہونے کا فیصلہ چیلنج

عورت مارچ رکوانے کیلئے لاہور ہائیکورٹ میں درخواست سماعت کیلئے منظور

لاہور ہائیکورٹ نے آئندہ ماہ 8 مارچ کو منعقد ہونیوالے ”عورت مارچ“ کو رکوانے کیلئے درخواست کو قابل…

2 دن
عورت مارچ رکوانے کیلئے لاہور ہائیکورٹ میں درخواست سماعت کیلئے منظور

والدین وکیل بیٹے سے جان کے تحفظ کیلئے سندھ ہائیکورٹ پہنچ گئے

کراچی۔ بوڑھے والدین وکیل بیٹے سے اپنی جان کے تحفظ کیلئے سندھ ہائیکورٹ پہنچ گئے۔ سندھ ہائیکورٹ میں…

2 دن

تازہ ترین

کورونا وائرس،جاپان میں منعقد ہونیوالے اولمپکس مقابلے منسوخ ہونے کا امکان

ٹوکیو۔ جاپان کے شہر ٹوکیو میں رواں سال 24 جولائی سے شروع ہونیوالے اولمپکس مقابلوں کے کورونا وائرس…

3 گھنٹے
کورونا وائرس،جاپان میں منعقد ہونیوالے اولمپکس مقابلے منسوخ ہونے کا امکان

بھارت ماتا کی جے کہنے والے بھارت میں رہنے کے حقدار، جے…

بھارتی ریاست ہماچل پردیش کے وزیراعلیٰ جے رام ٹھاکر کا کہنا ہے کہ بھارت ماتا کی جے کا…

3 گھنٹے
بھارت ماتا کی جے کہنے والے بھارت میں رہنے کے حقدار، جے رام ٹھاکر

ہانگ کانگ کا اپنے شہریوں کورقم اور ٹیکس چھوٹ دینے کا فیصلہ

ہانگ کانگ نے بڑھتے ہوئے اخراجات اور مالی بوجھ کے پیش نظر اپنے شہریوں کی مدد کیلئے مستقل…

3 گھنٹے
ہانگ کانگ کا اپنے شہریوں کورقم اور ٹیکس چھوٹ دینے کا فیصلہ

ایف بی آر کا رئیل اسٹیٹ اور زیورات کی نگرانی کا فیصلہ

اسلام آباد۔ ایف بی آر پاکستان میں انسداد منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کیلئے مالی مدد کی روک…

2 گھنٹے
قواعد کے مطابق زیورات کو دستاویزی شکل دی جائے گی

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے