بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

24-August-2019

بہار میں گائے چوری کے الزام میں تین افراد کو موت کے گھاٹ کیوں اتار دیا گیا

186 Views 0 1 مہینہ
بہار میں گائے چوری کے الزام میں تین افراد کو موت کے گھاٹ کیوں اتار دیا گی
Posted at 20 جولائی-2019

نئی دہلی۔ بھارتی ریاست بہار میں گاؤماتا گائے کے ذبح کئے جانے پر پابندی ہے۔ گاؤماتا کی آڑ میں جنونی ہندو مسلمانوں پر زمین تنگ کر دیتے ہیں۔ اب بہار کے ضلع ساران میں جنونی ہندوؤں نے گائے چوری کے الزام میں تین افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔ ایک زخمی کو ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ ہلاک ہونیوالے تینوں افراد مقامی شہری تھے۔

Courtesy twitter

پولیس نے قتل کا مقدمہ درج کر تین ہندوؤں کو گرفتار کر لیا

ریاستی پولیس افسر کا کہنا ہے کہ تین افراد گائے کو پک اپ میں ڈال رہے تھے کہ اس دوران گاؤں والوں نے گائے چوری کے الزام میں انہیں پکڑ لیا۔ پولیس ذرائع کا عینی شاہدین کے حوالے سے کہنا ہے کہ تینوں افراد کو بدترین تشدد کا نشانہ بنایا گیا جس پر وہ جاں بحق ہو گئے۔ پولیس نے قتل کا مقدمہ درج کر تین ہندوؤں کو گرفتار کر لیا جبکہ چار کی تلاش جاری ہے۔

بھارت میں گائے ذبح کرنے اور اس کا گوشت کھانے پر کئی مسلمانوں اور دلتوں کو قتل کیا جا چکا ہے۔ پچھلے تین چار سال کے دوران گائے سمگل کرنے یا گائے کے گوشت کھانے کے شبے میں ہندو انتہا پسندوں نے 10 مسلمان قتل کر دئیے۔ 2015ء میں بھی ایک مسلمان کو اس کے پڑوسیوں نے محض گائے کو ذبح کرنے کے شبے میں قتل کر دیا مگر بعد ازاں پولیس کا کہنا تھا کہ مقتول کے گھر سے برآمد ہونیوالا گوشت بکرے کا تھا۔

متعلقہ خبریں

قندیل بلوچ قتل کیس کے ملزمان کی معافی…

ملتان۔ سابق ماڈل و اداکارہ قندیل بلوچ کا اندھا قتل نہ صرف ان کے پرستاروں بلکہ بوڑھے والدین…

1 دن

سابق وزیراعظم بلٹ پروف گاڑی کیس میں شامل…

اسلام آباد۔ اختیار ایک ایسی شے ہے جب بندے کے پاس ہو تو اسے غلط اور صحیح کی…

1 دن

عالمی تنظیم کا کشمیریوں کی نسل کشی پر…

نیویارک۔ کشمیر ایک طے شدہ عالمی تنازع ہے مگر بھارت نے کشمیر کے خصوصی درجے کو ختم کر…

1 دن
عالمی تنظیم کا کشمیریوں کی نسل کشی پر الرٹ جاری

پی ٹی آئی رہنما مودی کے دورہ نیویارک…

اسلام آباد۔ مودی سرکار کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کا درجہ تبدیل کرنے کے بعد پاکستان کی جانب…

2 دن
پی ٹی آئی رہنما مودی کے دورہ نیویارک میں بھرپوراحتجاج کریں۔ وزیراعظم

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے