بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

21-August-2019

نوے پاکستانی دلہنوں کے ویزے روک لئے

377 Views 0 3 مہینے
Posted at 15 مئی-2019

اسلام آباد۔ چینی لڑکوں کی پاکستانی لڑکیوں کے ساتھ شادی کر کے انہیں جسم فروشی کا مکروہ دھندہ اور انسانی اعضاء کی فروخت کا سیکنڈل منظرعام پر آنے کے بعد نہ صرف حکومت پاکستان بلکہ چینی حکومت نے بھی سخت ایکشن لیا ہے۔ اس ضمن میں پاکستان میں چینی سفارت خانہ بھی ایکشن میں آ گیا ہے اور 90 پاکستانی دلہنوں کے ویزے روک لئے گئے۔

چینی سفارت کے ڈپٹی مشن کا کہنا ہے کہ اس سال شادی ویزا کی درخواستوں میں نمایاں اضافہ ہوا ہے۔ گزشتہ برس 142 چینی باشندوں نے پاکستانی بیویوں کیلئے چینی سفارت خانے سے ویزے لئے۔ تاہم اس سال چند ماہ میں ہی ڈیڑھ سو کے لگ بھگ درخواستیں موصول ہونے پر سفارت خانے محتاط ہو گیا۔ اب تک صرف 50 پاکستانی دلہنوں کو ویزے جاری کئے۔ دیگر 90 دلہنوں کے ویزے روک لئے گئے۔

اس سکینڈل کے بعد پاکستانی حکام بھی الرٹ ہو گئے ہیں اور پاکستانی تفتیشی اداروں نے بھی تحقیق شروع کر دی ہے۔ گزشتہ سال کے تمام کیسز کی تفتیش چینی ادارے کر رہے ہیں۔ ان تحقیقات میں جسم فروشی اور اعضا کی فروخت کا ایک بھی ثبوت نہیں ملا۔ چینی سفارت خانے کے ڈپٹی مشن نے مزید کہا ہے کہ ایک سو بیالیس کیسز میں ایک دو واقعات میں تشدد یا ہراساں کئے جانے کی شکایات آئی ہیں۔ تمام چینی باشندوں نے ویزوں کیلئے قانونی تقاضے پورے کئے۔

تمام چینی لڑکے پاکستانی سفارت خانے سے ویزے لے کر یہاں آئے

تمام چینی لڑکے پاکستانی سفارت خانے سے ویزے لے کر یہاں آئے۔ یونین کونسل سے نکاح نامے لئے اور پھر رجسٹرار کے دفتر اندراج کرایا۔ اس سے اگلے مرحلے پر وزارت خارجہ سے تصدیق کرائی۔ بعد ازاں چینی سفارت خانے سے اپنے کاغذات کی تصدیق بھی کروائی۔ آخری مرحلے میں اپنی بیویوں کیلئے ویزے پلائی کئے۔

پاکستانی خواتین کی مدد کیلئے ہمہ تیار ہیں

اس لئے یہ تمام شادیاں قانونی اور جائز ہیں اور ان کے تحفظ کیلئے ہم کوشش بھی کر رہے ہیں۔ چینی ڈپٹی مشن نے مزید کہا کہ وہ پاکستانی خواتین کی مدد کیلئے ہمہ تیار ہیں۔ حال ہی میں چینی ٹاسک فورس کے دورہ پاکستان کے موقع پر ایک طریقہ کار بھی وضع کیا ہے جس کے تحت کوئی بھی پاکستانی ٹیلی فون کال کر کے ان شادیوں کے حوالے سے سفارت خانے کی مدد طلب کر سکتا ہے۔

ایسے کیسز میں پاکستانی قانون نافذ کرنے والے اداروں کی بھی مدد کریں گے

اگر کوئی مسئلہ ہوا تو چینی حکومت اور پولیس ان کی بھرپور مدد کرے گی۔ نئے کیسز پر بھی تحقیقات کر رہے ہیں اگر کوئی جرم ثابت ہوا تو ہرگز برداشت نہیں کریں گے۔ایسے کیسز میں پاکستانی قانون نافذ کرنے والے اداروں کی بھی مدد کریں گے۔ پاک چین دوستی ہر آزمائش پر پورا اتری ہے اور آئندہ بھی اترے گی۔ پاکستانی حکومت کی ویزا آن آرائیول پالیسی کو چند میرج بیوروز غلط استعمال کر رہے ہیں۔

حکومت پاکستان کو اس پر نظرثانی کرنی چاہئے۔ کاروبار کے نام پر پاکستان آنے والے ان چینی باشندوں کو بھی چیک کرنا چاہئے جو یہاں کر شادیاں کرتے ہیں۔ یہ حکومت پاکستان کا فرض ہے کہ وہ کھوج لگائے کہ وہ کن کاروباری اداروں اور چیمبرز آف کامرس کی دعوت پر یہاں آئے ہیں۔

متعلقہ خبریں

بھارتی فورسز کے سرچ آپریشن کے دوران دو…

سری نگر۔ مقبوضہ کشمیر کا خصوصی درجہ ختم ہؤے آج 17واں روز ہے۔ کشمیریوں پر بھارتی سیکیورٹیز فورسز…

48 منٹ
بھارتی فورسز کے سرچ آپریشن کیدوران دو کشمیری شہید

بورس جانسن بھی مسئلہ کشمیر پر دوطرفہ مذاکرات…

لندن۔ مودی سرکار کی جانب سے کشمیر کا خصوصی درجہ ختم کرنے کے بعد کشمیر ایک مرتبہ پھر…

2 گھنٹے
بورس جانسن بھی مسئلہ کشمیر پر دوطرفہ مذاکرات کے حامی

میٹروبس کے کرائے بھی بڑھ گئے

لاہور۔ پی ٹی آئی نے اقتدار سنبھالا تو عوام کو خوشخبری سنائی کہ اب دودھ اور شہد کی…

3 گھنٹے

ٹرمپ کی کشمیر پر پھر ثالثی کی پیشکش،…

طارق منیر بٹ واشنگٹن۔ ڈونلڈ ٹرمپ نے امریکی صدر کا عہدہ سنبھالا تو امریکی قوم دو گروہوں میں…

3 گھنٹے
ٹرمپ کی کشمیر پر پھر ثالثی کی پیشکش، کیا یہ ایشو حل ہونے جا رہا ہے؟

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے