بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

18-August-2019

دس افراد کا سڈنی ہاربر بریج سے رسیوں کے ذریعے لٹکنے کا مظاہرہ

374 Views 0 3 مہینے
دس افراد کا سڈنی ہاربر بریج سے رسیوں کے ذریعے لٹکنے کا مظاہرہ
Posted at 14 مئی-2019

سڈنی۔ دنیا بھر میں بڑھتی ہوئی ماحولیاتی تبدیلیاں انسانی زندگی کیلئے کس قدر شدید خطرہ بنتی جا رہی ہیں۔ ماحولیاتی تبدیلیوں سے تحفظ کیلئے کئی عالمی تنظیمیں دنیا بھر میں کام کر رہی ہیں۔ ان میں ایک اہم نام گرین پیس تنظیم کا بھی ہے جو بڑی حکومتوں کی توجہ اس اہم مسئلے کی جانب مبذول کرا رہی ہے۔

آسٹریلوی وزیراعظم سے ہنگامی اقدامات کیلئے احتجاج کا انوکھا طریقہ

اس کا دعویٰ ہے کہ موسمیاتی تبدیلیوں سے انسانیت کو کیا سنگین خطرات لاحق ہیں۔ ان کے بارے میں سوچ کر ہی انسان کانپ جاتا ہے۔ گزشتہ دنوں زمین کو ماحولیاتی تبدیلیوں کے اثرات سے محفوظ بنانے کیلئے گرین پیس تنظیم کے سماجی کارکنوں نے آسٹریلوی وزیراعظم سے ہنگامی اقدامات کیلئے احتجاج کا انوکھا طریقہ اختیار کیا۔

آب و ہوا کی تبدیلی میں کوئلے کا استعمال اہم مسئلہ

اس احتجاج میں دس سماجی کارکن ہاربر بریج سے رسیوں کے ذریعے لٹک گئے جنہیں بعد ازاں پولیس نے گرفتار کر لیا۔ گرین پیس تنظیم آسٹریلیا کے سربراہ کا کہنا ہے کہ آب و ہوا کی تبدیلی میں کوئلے کا استعمال ایک اہم مسئلہ ہے۔

گرین پیس تنظیم کے کارکنوں نے ہاربر بریج پررسیوں سے لٹک کر لوگوں کو بتایا ہے کہ انہیں ماحولیاتی تبدیلیوں کے اثرات سے بچنے کیلئے سخت ہنگامی اقدامات کی ضرورت ہے۔

متعلقہ خبریں

بھارتی کرنل نے کشمیریوں پر ظلم ڈھانے کی…

سری نگر۔ مقبوضہ کشمیر کا خصوصی درجہ ختم کرنے کے بعد کشمیریوں پر مودی سرکار کے ظلم و…

3 منٹ
بھارتی کرنل نے کشمیریوں پر ظلم ڈھانے کی بجائے استعفٰی دے دیا

ترکی کا کشمیر پر سلامتی کونسل کے اجلاس…

انقرہ۔ ترکی پاکستان کا عظیم برادر دوست اسلامی ملک ہے۔ مشکل کی ہر گھڑی میں پاکستان کا ساتھ…

47 منٹ
ترکی کا کشمیر پر سلامتی کونسل کے اجلاس کا خیرمقدم

کشمیر میں کرفیو 14ویں روز میں داخل، کھانے…

سری نگر۔ مودی سرکار کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کا خصوصی درجہ ختم ہونے کو 14 روز گزر…

2 گھنٹے
کشمیر میں کرفیو 14ویں روز میں داخل، کھانے پینے کا شدید بحران

الیکشن کمیشن کے غیر فعال ہونے کا خدشہ

اسلام آباد۔ الیکشن کمیشن آف پاکستان ایک آئینی ادارہ ہے۔ چیف الیکشن کمیشن اور چاروں صوبائی ممبران کی…

2 گھنٹے
الیکشن کمیشن کے غیر فعال ہونے کا خدشہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے