بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

04-June-2020

کرنل قذافی کو کیوں قتل کیا گیا، خفیہ حقائق سامنے آ گئے

paktv Avatar
530 Views 0 8 مہینے
Mirror
Posted at 8 اکتوبر-2019

لیبیا کے سابق آمر کرنل قذافی کو جب قتل کیا گیا تو ان کے لبوں پر یہ الفاظ تھے ”میں نے تمہارا کیا بگاڑا ہے“؟ حال ہی میں معمر قذافی کی پرانی خفیہ ای میلز سامنے آئی ہیں جس سے اندازہ ہوتا ہے کہ انہیں محض اس لئے قتل کیا گیا کیونکہ فرانس افریقی ممالک پر اپنی مالی دھاک بٹھانا چاہتا تھا۔

سابق امریکی وزیر خارجہ ہیلری کلٹن کی 2016ء میں سامنے آنیوالی خفیہ ای میلز محکمہ خارجہ نے جاری کی ہیں۔ ان ای میلز کی تعداد 3 ہزار ہے۔ ان ایل میلز کو پڑھ کر معلوم ہوتا ہے کہ مغربی ممالک نے نیٹو کو معمر قذافی کی حکومت کا تختہ الٹنے کیلئے استعمال کیا۔

Courtesy Twitter

قذافی کا تختہ الٹنا عوامی بھلائی کا اقدام ہرگز نہیں تھا

نیٹو کا معمر قذافی کا تختہ الٹنا عوامی بھلائی کا اقدام ہرگز نہیں تھا بلکہ قذافی کو سونے کی بنیاد پر افریقی خطے میں فرانسیسی اور یورپی کرنسی کی طرح مقامی مشترکہ کرنسی متعارف کرانے سے روکنا تھا۔ قذافی کے منصوبے کی کامیابی کی صورت میں افریقی ممالک میں مغربی بنکاری کی اجارہ داری ختم ہونے کا خدشہ تھا۔

بنیادی مقصد لیبیا کے تیل پر قبضہ حاصل کرنا تھا

اپریل 2011ء میں ہیلری کلنٹن کو ان کے مشیر کی جانب سے بھجوائی جانیوالی ای میل میں میں انہیں واضح طور پر مغربی ممالک کے خطرناک ارادوں سے آگاہ کیا گیا تھا۔ ای میل میں واضح تھا کہ فرانس کی قیادت میں نیٹو افواج کی لیبیا میں کی جانیوالی کارروائی کا بنیادی مقصد لیبیا کے تیل پر قبضہ حاصل کرنا تھا اور اس کے ساتھ قذافی کے اس دیرینہ منصوبے کو ناکام بنانا تھا جس کے تحت وہ افریقہ میں فرانس کے زیر اثر علاقوں میں اپنا قبضہ حاصل کرنا چاہتا تھا۔

خفیہ ای میلز میں سابق فرنچ صدر سرکوزی کو بھی لیبیا پر حملے کرنے والوں میں سرفہرست دکھایا گیا ہے۔ ان ای میلز میں لیبیا پر قبضہ کیلئے پانچ بنیادی مقصد کو مدنظر رکھا گیا لیبا کا تیل حاصل کرنا، خطے میں فرانس کا اثرورسوخ برقرار رکھنا، ملک میں داخلی سطح پر سرکوزی کی ساکھ بہتر کرنا، فرنچ، عسکری قیادت کو اجاگر کرنا اور قذافی کے افریقی خطے میں اثرورسوخ کو کم کرنا شامل تھا۔

قذافی کے دیرینہ ساتھی اور ترجمان موسیٰ ابراہیم نے روسی ٹی وی کے ساتھ ایک انٹرویو میں اس بات کا انکشاف کیا تھا کہ معمر قذافی کو اس لئے ہٹایا گیا کیونکہ وہ افریقہ سے غیر ملکیوں کو نکالنا چاہتے تھے۔ نیٹو کی لیبیا پر بمباری کی وجہ سے وہ تمام گروپس کھل کر سامنے آ گئے جنہیں قابو میں رکھا گیا تھا۔ یوں لیبیا کی عوام کا ایک دیرینہ خواب چکنا چور کر دیا گیا۔ یہ خواب دہائیوں کی نوآبادیاتی اور اس کے نظام کو دیکھ کر اور تجربات سے مرتب کیا گیا تھا۔

متعلقہ خبریں

اسکول کے سیکیورٹی گارڈ کا چاقو سے حملہ، 37 بچے زخمی ہو…

چین میں اسکول کے سیکیورٹی گارڈ نے بچوں اور اساتذہ پر چاقو سے حملہ کردیا۔ برطانوی میڈیا کے…

3 گھنٹے
اسکول کے سیکیورٹی گارڈ کا چاقو سے حملہ، متعدد بچے زخمی

بھارت اور آسٹریلیا اب ایک دوسرے کے فوجی اڈے استعمال کریں گے

بھارت اور آسٹریلیا نے ایک دوسرے کے فوجی اڈے استعمال کرنے کا معاہدہ کرلیا ہے۔ بھارتی میڈیا کے…

4 گھنٹے
بھارت اور آسٹریلیا اب ایک دوسرے کے فوجی اڈے استعمال کریں گے

سعودی حکومت 2 سال تک نجی اداروں کے ملازمین کو نصف تنخواہ…

سعودی عرب میں معیشت کے استحکام اور کمپنیوں کو دیوالیہ ہونے سے بچانے کیلئے نجی اداروں کے ملازمین…

23 گھنٹے
سعودی حکومت 2 سال تک نجی اداروں کے ملازمین کو نصف تنخواہ دے گی

نویں کلاس کی طالبہ نے آن لائن کلاس چھوٹنے پر خودکشی کرلی

نویں جماعت کی طالبہ نے آن لائن کلاس چھوٹنے پر خود کشی کرلی ہے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق…

2 دن

تازہ ترین

بھارتی خفیہ اہلکاروں کی قائم مقام پاکستانی ہائی کمشنرسے بدتہذیبی

بھارت نے سفارتی آداب کی ایک بار پھر دھجیاں بکھیر دیں، بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں پاکستانی سفارتکاروں…

58 منٹ
بھارتی خفیہ اہلکاروں کی قائم مقام پاکستانی ہائی کمشنرسے بدتہذیبی

ایس او پیز کی خلاف ورزی پرمتعدد مارکیٹیں سیل، دکاندار گرفتار

ایس او پیز کی خلاف ورزی کرنے پر کئی مارکیٹیں سیل کرکے متعدد دکانداروں کو گرفتار کرلیا گیا…

24 منٹ
ایس او پیز کی خلاف ورزی پرمتعدد مارکیٹیں سیل، دکاندار گرفتار

علامہ اقبال ایکسپریس ٹرین میں آگ لگ گئی

لاہور سے سیالکوٹ جانیوالی ٹرین علامہ اقبال ایکسپریس میں وزیرآباد کے مقام پر آگ لگ گئی۔ ریسکیو حام…

2 گھنٹے
علامہ اقبال ایکسپریس ٹرین میں وزیرآباد آگ لگ گئی

اسکول کے سیکیورٹی گارڈ کا چاقو سے حملہ، 37 بچے زخمی ہو…

چین میں اسکول کے سیکیورٹی گارڈ نے بچوں اور اساتذہ پر چاقو سے حملہ کردیا۔ برطانوی میڈیا کے…

3 گھنٹے
اسکول کے سیکیورٹی گارڈ کا چاقو سے حملہ، متعدد بچے زخمی

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے