بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

20-September-2019

بھارتی ادویات کی درآمدات سے پابندی ہٹا لی گئی

79 Views 0 2 ہفتے
بھارتی ادویات کی درآمدات سے پابندی ہٹا لی گئی
Posted at 4 ستمبر-2019

اسلام آباد۔ کہنے کو تو ہم نے بھارت کے ساتھ تجارت پر پابندی عائد کر دی ہے مگر جان بچانے والی ادویات کی مقامی مارکیٹوں میں بحران سے بچنے کیلئے حکومت نے بھارت سے ادویات اور خام مال کی درآمدات پر پابندی ہٹا لی۔ یہ کڑوا گھونٹ حکومت کو مجبوری کے تحت پینا پڑ رہا ہے۔

وزارت تجارت و ٹیکسٹائل کی جانب سے جاری ہونیوالے ایس آر او میں کہا گیا ہے کہ بھارت سے تجارت پر پابندی ہنوز بحال رہے گی۔ تاہم اس کا اطلاق ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی آف پاکستان کی جانب سے ریگولیٹ ہونیوالی مصنوعات پر نہیں ہو گا۔

Courtesy Twitter

بھارت سے تجارت پر پابندی ہنوز بحال رہے گی

یہ استثنٰی مفاد عامہ اور مریضوں کو ادویات کی فراہمی کیلئے کیاگیا ہے۔ واضح رہے پانچ اگست کو مودی سرکار کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کا خصوصی درجہ تبدیل کرنے کے بعد پاکستان نے 9 اگست کو بھارت سے تمام قسم کی تجارت منسوخ کرنے کا اعلان کیا۔

ابتدائی طور پر فارماسیوٹیکل انڈسٹری نے حکومت سے قواعد میں نرمی اور بھارتی مصنوعات کو فیصلے سے قبل درآمد کرنے کا کہا تھا جس پر حکومت نے نرمی کرتے ہوئے پاکستانی بندرگاہوں اور ائرپورٹس پر پہنچنے والی اشیاء کو کلیئرنس دے دی تھی۔ وزارت صنعت نے بھارت سے ادویات کی پابندی کے خاتمے کا مطالبہ کیا تھا اور ساتھ ہی یہ بھی کہا گیا تھا کہ اگر ایسا نہ کیا گیا تو چند ہفتوں میں ملک میں ادویات کا شدید بحران پیدا ہو سکتا ہے۔

ادویات ساز صنعت کا بھارتی ادویات اور خام مال پر بڑی حد تک انحصار ہے

جان بچانے والی ادویات مارکیٹ سے ناپید ہو سکتی ہیں۔ باخبر ذرائع کا کہنا ہے کہ پچھلے ہفتے اس مسئلے پر بحث کیلئے ایک اجلاس بھی طلب کیا گیا تھا۔ اس میں تمام سٹیک ہولڈرز نے شرکت کی تھی اور بتایا گیا تھا کہ ادویات کی دستیابی یقیین بنانا ناممکن ہو جائیگا۔ ادویات ساز صنعت کا بھارتی ادویات اور خام مال پر بڑی حد تک انحصار ہے۔

دوسرا بھارتی ادویات کم قیمت پر دستیاب ہیں اور حکومت نے کوئی متبادل انتظام نہ کیا تو ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کرنا ہو گا۔ تمام تجاویز وزارت صحت کو ارسال کر دی گئی ہیں جس کے بعد تمام فیصلہ سازوں کو پابندی کے خاتمے کا بھی کہاگیا ہے یا پھر ادویات کی قیمتوں میں اضافے کیلئے تیار رہنا ہو گا۔ ا

س حوالے سے تیسرا آپشن یہ ہو گا کہ ادویات کو سبسڈی فراہم کی جائے تاہم ملک کے مالی معاشی حالات اس کی اجازت نہیں دیتے۔

متعلقہ خبریں

باسی دال کھانے سے پانچ افراد ہسپتال پہنچ گئے

مظفر گڑھ۔ شاہ جمال روڈ مونڈکا ہسپتال کے قریب مضر صحت دال کھانے سے ایک ہی گھر کے…

1 ہفتہ
باسی دال کھانے سے پانچ افراد ہسپتال پہنچ گئے

ڈینگی متاثرین کی ملک بھر میں تعداد ہزاروں میں پہنچ گئی

پشاور۔ ڈینگی ایک مہلک مرض ہے جو ایک مخصوص مچھر کے نتیجے میں لاحق ہوتا ہے۔ چند برس…

2 ہفتے
ڈینگی متاثرین کی ملک بھر میں تعداد ہزاروں میں پہنچ گئی

مردہ خاتون کے ہاں صحت مند بچی کی پیدائش

پراگ۔ اسے سائنس کی دنیا کا عجوبہ کہا جائے یا قدرت کی کاریگری جسے سن کر نہ صرف…

2 ہفتے
مردہ خاتون کے ہاں صحت مند بچی کی پیدائش

لاڑکانہ میں کتے کے کاٹنے کی دوا بھی نہیں

لاڑکانہ۔ ایک دور میں لاڑکانہ کو پیپلز پارٹی کا قلعہ کہا جاتا تھا۔ پورے ملک کی توجہ کا…

2 ہفتے
لاڑکانہ میں کتے کے کاٹنے کی دوا بھی نہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے