بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

24-August-2019

وزیراعظم نے روایتی مفلر پہنا کر لیگی ایم پی اے کو تحریک انصاف میں کیوں شامل کیا

176 Views 0 1 مہینہ
وزیراعظم نے روایتی مفلر پہنا کر لیگی ایم پی اے کو تحریک انصاف میں کیوں شامل کیا
Posted at 19 جولائی-2019

لاہور۔ صاف چلی شفاف چلی تحریک انصاف چلی۔ یہ پی ٹی آئی اے کا 21 سال تک نعرہ رہا۔ عمران خان ملک سے کرپشن اور ناانصافی کو ختم کرنے کا نعرہ لیکر اقتدار میں آئے مگر اب یوں دکھائی دیتا ہے کہ وہ اپنی کہی تمام باتوں کو بھول گئے ہیں۔ 11 ماہ سے اقتدار میں آنے کے باوجود ابھی تک اپنا ایک بھی وعدہ پورا نہیں کیا بلکہ اب وزیراعظم فرماتے ہیں کہ لیڈر وہی ہوتا ہے جو یوٹرن لے لیتا ہے۔

بلکہ وہ فخریہ انداز میں ہٹلر کی مثال دیتے ہیں جس نے یوٹرن نہ لیکر نہ صرف اپنی قوم بلکہ ذاتی زندگی کا خاتمہ بھی کر ڈالا۔ ایک دور میں عمران خان ن لیگ اور پی پی پر لوٹا کریسی کا الزام لگاتے نہیں تھکتے تھے مگر اب خود ان کے نزدیک دوسری جماعتوں کے اراکین توڑنا بری بات نہیں ہے۔ پچھلے دنوں مسلم لیگ ن کے ایم پی اے یونس انصاری کی قیادت میں لیگی اراکین کے ایک گروپ نے ان کے ساتھ بنی گالہ میں ملاقات کی تھی۔

Courtesy Twitter

ایک دور میں عمران خان ن لیگ اور پی پی پر لوٹا کریسی کا الزام لگاتے نہیں تھکتے تھے

تب ن لیگی ایم پی اے نے 37 اراکین کے ٹوٹنے کا دعویٰ کیا تھا۔ وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ ن لیگ کا فاروڈ بلاک بننے کیلئے مزید سات ایم پی اے درکار ہیں۔ اب عمران خان نے فاروڈ بلاک بننے کا انتظار بھی نہیں کیا بلکہ لیگی ایم پی اے یونس انصاری کو باقاعدہ تحریک انصاف میں شامل کر لیا۔ اگر وہ استعفٰی دیکر پی ٹی آئی اے میں آتے تو نہ صرف ان کے اپنے قدکاٹھ میں اضافہ ہوتا اور عمران خان پر بھی کوئی حرف نہ آتا۔

پرانی کہاوت کہ سیاست کے سینے میں دل نہیں ہوتا

بہرحال یہ سیاست ہے اور پرانی کہاوت ہے کہ سیاست کے سینے میں دل نہیں ہوتا۔ ورنہ عمران خان ماضی سے کچھ تو سبق سیکھتے۔ بہرحال اب وہ اقتدار میں ہیں جس کا اپنا نشہ ہوتا ہے مگر انہیں یہ نہیں بھولنا چاہئے کہ وقت سدا ایک سا نہیں رہتا۔ ن لیگ بھی کبھی اسٹیبلشمنٹ اور اداروں کے آنکھوں کا تارا تھی مگر اب ان کی معتوب ٹھہری ہے۔

عمران خان کو ن لیگی رہنما یونس انصاری مبارک ہو

اگر یقین نہیں آتا تو رانا ثنا اللہ، پرویز رشید اور دیگر جیالوں اب لیگی رہنماؤں سے پوچھ لیں یہ بھی کبھی جیالے تھے اور انہیں توڑنے کیلئے کیا کیا ہتھکنڈے استعمال نہیں کئے گئے۔ یہ بھی ایک تاریخ ہے۔ وزیراعظم عمران خان کو ن لیگی رہنما یونس انصاری مبارک ہو۔ ایسے وفاداروں کو پی ٹی آئی جیسی بڑی اور اچھی جماعتوں میں ہی ہونا چاہئے جن کا موقف ہے کہ انہوں نے پارٹی نہیں چھوڑی۔

انہیں پی ٹی آئی کا روایتی مفلر پہنا کر تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان

وہ تو سرکاری جماعت کے ایم پی اے ہیں۔ اگر جماعت بدل گئی ہے تو ان کا کیا قصور وہ تو اب بھی سرکاری جماعت میں ہیں۔ وزیراعظم عمران خان بھی بڑے دل گردے کے آدمی ہیں۔ انہیں بھی اس کام کی شاباش ضرور ملنی چاہئے۔ یونس انصاری کو گزشتہ روز ایوان وزیراعلٰی میں ملاقات کیلئے بلوا لیا۔ انہیں پی ٹی آئی کا روایتی مفلر پہنا کر تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کیا۔

کبھی شہباز شریف سرکاری مشینری کے ذریعے الیکٹ یبل اور اہم رہنماؤں کو توڑنے کا کام کرتی تو خان صاحب کو ملک کی فکر پڑ جاتی مگر اب عثمان بزدار وسیم اکرم پلس ایسے کاموں کے ماہر بنتے جا رہے ہیں۔ خان صاحب واقعی مردم شناس ہیں۔ ان کی دور بین آنکھوں نے بڑی پہلے ان کی صلاحیتوں کو جانچ لیا تھا۔ یقین نہیں آتا تو ن لیگ کا فاروڈ بلاک ان کا عظیم کارنامہ قرار پائے گا۔

متعلقہ خبریں

وسیم اختر کی واڈا کے بیان پر وفاقی…

کراچی۔ کراچی ایک ایسا میٹروپولیٹن شہر ہے جو پچھلے کئی سال سے مسائلستان بنا ہوا ہے۔ کراچی کے…

3 گھنٹے
وسیم اختر کی واڈا کے بیان پر وفاقی حکومت سے علیحدگی کی دھمکی

ایک ہفتے کے دوران سٹاک مارکیٹ 2585 پوائنٹس…

کراچی۔ وفاقی بجٹ کی منظوری اور آئی ایم ایف پروگرام میں جانے کے بعد روپے کی قدر میں…

4 گھنٹے
ایک ہفتے کے دوران مارکیٹ 2585 پوائنٹس بڑھ گئی

بے نامی جائیدادوں کیخلاف کریک ڈاؤن کا بڑا…

اسلام آباد۔ بدترین معاشی بحران سے نمٹنے کیلئے وفاقی حکومت نے ٹیکس نیٹ کا دائرہ 55 سو ارب…

6 گھنٹے
بے نامی جائیدادوں کیخلاف کریک ڈاؤن کابڑا فیصلہ

مودی تم سری نگر میں جلسہ کر کے…

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول نے اسکردو میں جلسہ کرتے ہوئے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کو چیلنج…

2 دن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے