بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

24-August-2019

سنجرانی کیخلاف تحریک عدم اعتماد واپس لینے کی درخواست کیوں زیر غور آئی

138 Views 0 1 مہینہ
سنجرانی کیخلاف تحریک عدم اعتماد واپس لینے کی درخواست کیوں زیر غور آئی
Posted at 18 جولائی-2019

اسلام آباد۔ حکومت کی جانب سے چیئرمین سینیٹ کیخلاف تحریک عدم اعتماد واپس لینے کیلئے اپوزیشن رہنماؤں رضا ربانی اور شیریں رحمان سے قائد ایوان سینیٹ شبلی فراز نے ملاقات کی اور انہیں چیئرمین سینیٹ کیخلاف تحریک عدم اعتماد واپس لینے کیلئے اپنی جماعت سے بات کرنے کی درخواست کی۔ شبلی فراز کا کہنا ہے کہ چیئرمین سینیٹ کیخلاف آج تک کوئی تحریک نہیں آئی۔

Courtesy Dunya

صدارت سینیٹ میں اپوزیشن رہنما ظفر الحق نے کی

دوسری جانب چیئرمین سینیٹ کیخلاف اپوزیشن جماعتوں کے مشترکہ مشاورتی اجلاس میں حکومت کی جانب سے تحریک عدم اعتماد واپس لینے کی درخواست مسترد کر دی گئی۔ سینیٹ میں آج اپوزیشن جماعتوں کا مشترکہ اجلاس ہوا جس کی صدارت سینیٹ میں اپوزیشن رہنما راجہ ظفر الحق نے کی۔

نیشنل پارٹی کے علاوہ دیگر جماعتوں کے 52 سینیٹرز موجود

اجلاس میں تمام اپوزیشن جماعتوں کے رہنماؤں نے شرکت کی۔ اس موقع پر نیشنل پارٹی کے علاوہ دیگر جماعتوں کے 52 سینیٹرز موجود تھے۔ ان میں نامزد اپوزیشن چیئرمین سینیٹ حاصل بزنجو، ڈپٹی چیئرمین سلیم مانڈیوالا، رضا ربانی اور عبدالغفور حیدری بھی شامل تھے۔

اس موقع پر چیئرمین سینیٹ کیخلاف تحریک عدم اعتماد پر حکمت عملی پر مشاورت کی گئی اور حکومت کی جانب سے تحریک عدم اعتماد واپس لینے کی درخواست مسترد کر دی گئی۔

متعلقہ خبریں

مودی تم سری نگر میں جلسہ کر کے…

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول نے اسکردو میں جلسہ کرتے ہوئے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کو چیلنج…

1 دن

ملک ریاض 25 ارب روپے کی قسط ادا…

اسلام آباد۔ وفاقی حکومت نے عدالت کے ذریعے بحریہ ٹاؤن سے رقم ادائیگی کیس کے پیسے مانگ لئے۔…

1 دن
ملک ریاض 25 ارب روپے کی قسط ادا کرے۔ سپریم کورٹ

نیب کی 10 نئی انکوائریز اور دو انویسٹی…

اسلام آباد۔ ایک طرف نیب کے پر کاٹ کر اختیارات محدود کرنے کی باتیں ہو رہی ہیں تو…

2 دن
نیب کی 10 نئی انکوائریز اور دو انویسٹی گیشنز کی منظوری

حکومت کا نیب قانون میں ترمیم لانے کا…

اسلام آباد۔ نیب کا ادارہ مشرف دور میں حریفوں کو کنٹرول کرنے کیلئے وجود میں لایا گیا۔ بعد…

2 دن
حکومت کا نیب قانون میں ترمیم لانے کا فیصلہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے