بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

22-July-2019

صدارتی آرڈیننس کے ذریعے نئی ٹیکس ایمنسٹی سکیم لاگو

241 Views 0 2 مہینے
Posted at 15 مئی-2019

اسلام آباد۔ ملک میں بڑھتے ہوئے معاشی بحران کیلئے حکومت نے کل کابینہ کے اجلاس میں نئی ٹیکس ایمنسٹی سکیم کی منظوری دی تھی۔ اب اسے پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں میں پیش کرنے کے بجائے حکومت نے صدارتی آرڈیننس کے ذریعے فوری لاگو کرنے کیلئے صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کے پاس بھجوایا تھا۔ ان کے مسودے پر دستخط کے بعد یہ باقاعدہ لاگو ہو گئی ہے۔

اب قانون کے تحت ملک میں جائیدادیں ڈیڑھ فیصد، بے نامی اثاثے اور کالا دھن 4 سے 6 فیصد ٹیکس اد کر کے قانونی بنائے جا سکیں گے۔ نئی ایمنسٹی سکیم میں بیرون ملک جائیدادیں 4 فیصد ٹیکس ادا کر کے قانونی بنائی جا سکتی ہیں لیکن شرط یہ ہے کہ ان اثاثوں کو پاکستان لایا جائے یا پاکستان بناؤ سرٹیفکیٹ میں سرمایہ کاری کی جائے۔

کاروبار پر سیلز ٹیکس دو فیصد ادا کر کے پرانے کھاتے قانونی بنائے جا سکتے ہیں

اگر کوئی پاکستانی بنک اکاؤنٹس بیرون ملک میں رکھنا چاہتا ہے تو اسے اضافی 4 کے بجائے 6 فیصد ٹیکس ادا کرنا ہو گا۔ کاروبار پر سیلز ٹیکس دو فیصد ادا کر کے پرانے کھاتے قانونی بنائے جا سکتے ہیں مگر اس سکیم سے فائدہ اٹھانے والوں کو ڈیفالٹ سرچارج بھی ادا کرنا ہو گا جو کہ 30 جون سے 30 ستمبر کے درمیان عائد ٹیکس کا 10 فیصد ہو گا۔ 30 ستمبر سے 31 دسمبر تک یہ شرح 20 فیصد ہو گی

مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی نے نئی ٹیکس ایمنسٹی سکیم کو مسترد کر دیا

31 دسمبر 2019ء سے 31 مارچ 2020ء تک ٹیکس ادا کرنے والوں کو 30 فیصد جبکہ 30 جون 2020ء تک سکیم سے فائدہ اٹھانے والوں کو عائد ٹیکس کا 40 فیصد سرچارج ادا کرنا ہو گا۔

واضح رہے کہ پارلیمینٹ کی دو بڑی جماعتوں مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی نے نئی ٹیکس ایمنسٹی سکیم کو مسترد کر دیا ہے۔ دونوں بڑی جماعتوں کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان اپوزیشن میں تھے تو ایمنسٹی سکیم کو کرپٹ لوگوں کو نوازنے کا ایک بھونڈا طریقہ قرار دیتے تھے مگر اب ان کی ترجیحات بدل چکی ہیں۔

متعلقہ خبریں

طالبان کو جنگ بندی پر راضی کرنے کیلئے…

اسلام آباد۔ اگلے سال امریکہ کا صدارتی انتخاب ہونے جا رہاہے۔ صدر ٹرمپ دوسری ٹرم کیلئے امریکی صدر…

6 گھنٹے
طالبان کو جنگ بندی پر راضی کرنے کیلئے امریکہ پاکستان کے کردار کا خواہش مند

ایف بی آر کو جولائی کے پہلے تین…

کراچی۔ آئی ایم ایف کی منظوری اور وفاقی بجٹ کی منظوری کے بعد ہر پاکستان کو ٹیکس نیٹ…

7 گھنٹے
ایف بی آر کو جولائی کے پہلے تین ہفتوں میں 181 ارب روپے کی ٹیکس وصولیاں

مون سون بارشوں کی وجہ سے دریاؤں کے…

مظفر آباد۔ مون سون کا آغاز ہوتے ہی آزاد کشمیر کے دریاؤں میں ابال آنا شروع ہو جاتا…

7 گھنٹے
مون سون بارشوں کی وجہ سے دریاؤں کے کنارے رہنے والے کشمیری رہائشیوں کیلئے وا رننگ

چیئرمین سینیٹ نہ بنایا تھا اور نہ اب…

اسلام آباد۔ سابق صدر آصف زرداری کے بارے میں مشہور ہے کہ وہ زبان کے پکے ہیں۔ شاید…

8 گھنٹے
چیئرمین سینیٹ نہ بنایا تھا اور نہ اب اتار رہے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے