بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

24-August-2019

اونٹ کی کھال 40, دنبے کی 30 روپے

76 Views 0 1 ہفتہ
Posted at 13 اگست-2019

اج کل جہاں ہر چیز مہنگے داموں فروخت ہو رہی ہے وہاں جانوروں کی کھال کی قیمتیں اتنی گر گئی ہیں کہ آپ کہے کوئی مفت ہی لے جائے۔

اس بار عید الضحیٰ پر کھالیں اکھٹی کرنے کا رجحان بہت کم دیکھنے میں آیا اس کی خاص وجہ ان کی قیمت ہے۔ گھر گھر جا کر کھالیں اکھٹی کرنے پر جو خرچ ہونا ہے اتنی قیمت پر کھال ہی فروخت نہیں ہو گی۔

لاکھوں کا خریدا گیا اونٹ کی کھال کی قیمت محض چالیس روپے ہے۔ دنبہ یا چھترے کی کھال 30 روپے سے زیادہ میں نہیں بک رہی۔ بکرے کی کھال کی قیمت ایک سو روپے جب کہ سب سے مہنگی بیل کی کھال ہے جو ایک ہزار روپے تک فروخت ہو رہی ہے مگر اس کے لئیے کھال بھی صاف ستھری ہونی چاہیے۔ کوئی کٹ لگا تو قیمت اور گرے گی۔ حیران کن طور پر چمڑا مارکیٹ میں زیادہ فروخت ہونی والی کھال بیل کی ہے جس کی وجہ اجتماعی قربانی کا رجحان بڑھنا ہے۔

صفائی ستھری کی بات کرے تو کراچی میں بارشوں کی وجہ سے الائشوں کی گندگی جگہ جگہ نظر آتی ہے۔ اسلام آباد اور لاہور میں ستھری کے بہتر انتظامات کئیے گئے ہیں۔ پنجاب کے دیگر شہروں میں شہری ناقص انتظامات کی شکایت کرتے نظر ائے کیونکہ پنجاب حکومت کی زیادہ تر توجہ لاہور پر رہی جہاں دو روز میں ابھی تک 19 ہزار ٹن آلائشیں اٹھائی گئیں۔ بلوچستان اور خیبرپختونخوا میں بھی اہم شہروں کے علاؤہ الائشیوں کی بدبو نے شہریوں کا جینا محال کیا۔

متعلقہ خبریں

حکومت کا ڈالر سرٹیفکیٹس متعارف کرانے کا فیصلہ

کراچی۔ وفاقی بجٹ میں تاجروں پر بھاری ٹیکس لگانے اور آئی ایم ایف کے پروگرام میں جانے کے…

4 دن
حکومت کا ڈالر سرٹیفکیٹس متعارف کرانے کا فیصلہ

سٹاک مارکیٹ میں تیزی، انڈکس 30 ہزار کی…

کراچی۔ پی ٹی آئی کی حکومت آنے کے بعد سٹاک مارکیٹ میں مسلسل کمی دیکھنے میں آ رہی…

4 دن
سٹاک مارکیٹ میں تیزی، انڈکس 30 ہزار کی سطح عبور کر گیا

ایف اے ٹی ایف کا اینٹی منی لانڈرنگ…

اسلام آباد۔ ایف اے ٹی ایف کی جانب سے پاکستان کو گرے لسٹ میں شامل کئے جانے کی…

4 دن
ایف اے ٹی ایف کا اینٹی منی لانڈرنگ اور دہشت گردوں کو فنڈنگ سے روکنے پر زور

عامر خان ایس ای سی پی کے نئےچیئرمین…

اسلام آباد۔ کارپوریٹ بنکنگ، مالیاتی مصنوعات، کیپٹیل مارکیٹ اور ریگولیٹری اصلاحات کے شعبے میں تین دہائیوں سے زائد…

5 دن
عامر خان ایس ای سی پی کے نئےچیئرمین بن گئے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے