بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

19-September-2019

پولیس ریفارمز، اے ایس پیز بطور ایس ایچ او کام کریں گے

61 Views 0 1 ہفتہ
پولیس ریفارمز، اے ایس پیز بطور ایس ایچ او کام کریں گے
DUNYA NEWS
Posted at 12 ستمبر-2019

لاہور۔ پی ٹی آئی حکومت الیکشن 2018ء میں پنجاب میں پولیس اصلاحات کا نعرہ لگا کر اقتدار میں آئی تھی۔ ابھی تک اس پر عمل درآمد میں ناکام رہی۔ اب وزیراعظم عمران خان نے پنجاب میں پولیس اصلاحات کی باقاعدہ منظوری دے دی ہے۔ وزیراعظم سیکرٹریٹ کی جانب سے پنجاب کے تمام تھانوں میں ایس ایچ اوز کی جگہ اے ایس پیز مقرر کرنے کی منظوری دی گئی ہے تاکہ تھانوں کو انتظامی طور پر مزید مضبوط بنایا جا سکے۔

اسلام آباد کے چند تھانوں میں آزمائشی طورپر اے ایس پیز تعینات کیے جائیگے

یہ فیصلہ پی ٹی آئی حکومت پر حالیہ تنقید کا نتیجہ قرار دیا جارہا ہے جس کے دوران پولیس تشدد اور پولیس حراست میں اموات ہوئی۔ ان واقعات کی وجہ سے عوام میں سخت بے چینی پائی جاتی ہے۔ پہلے اقدام کے طور پر اے ایس پیز (گریڈ 17)کو اسلام آباد کے چند تھانوں میں آزمائشی طور پر تعینات کیا جائیگا۔

اسکا دائرہ پنجاب کے 712 تھانوں تک بڑھایا جائیگا

پولیس اصلاحات پر کام کرنیوالے ایک اعلٰی عہدیدار کا کہنا ہے کہ اس منصوبے کی کامیابی کی صورتحال میں اس کا دائرہ پنجاب بھر کے 712 تھانوں تک بڑھایا جائیگا۔ قبل ازیں پنجاب بھر کے تمام تھانوں میں کئی دہائیوں سے سب انسپکٹر یا انسپکٹر کو ایس ایچ او تعینات کیا جاتا ہے۔ یوں ایس ایس او ایف آئی آر درج کرنے کے اختیار کی وجہ سے محکمے کا بااثر اہلکار بن جاتا ہے۔

پنجاب بھر میں گریڈ 14 کے سب انسپکٹرز کی بڑی تعداد ایس ایچ اوز کے فرائض انجام دے رہی ہے۔ پولیس اصلاحات کرنیوالے اعلٰی عہدیدار کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی حکومت کو توقع ہے کہ موثر انتظامیہ تھانوں میں کرپشن، ہراسمنٹ، تشدد، ناقص تفتیش، قانون کا غلط استعمال جیسے بڑے ایشوز پر قابو پا سکے گی۔ اس کا مزید کہنا ہے کہ وزیراعظم سیکرٹریٹ نے اسٹیبلشمنٹ ڈویژن اور اسلام پولیس چیف عامر ذوالفقار کو ہدایت کی ہے کہ وہ تھانوں کو انتظامی طور پر بہتر بنانے پر توجہ مرکوز رکھیں۔

ان کا مزید کہنا ہے کہ حالیہ دنوں میں چند میٹنگز کے دوران اسلام آباد پولیس کی جانب سے یہ تحفظات سامنے آئے کہ ان کے پاس اے ایس پیز کی کمی ہے۔ ان کیلئے تمام تھانوں میں اے ایس پیز کو ایس ایچ اوز تعینات کرنا ممکن نہیں ہے۔ موجودہ صورتحال میں اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نے صوبوں کو اسلام آباد پولیس کیلئے چند اے ایس پیز دستبردار کرنے کا کہا ہے۔

مشرف دور میں یہ منصوبہ کئی وجوہات کی بنا پر چند ماہ میں ہی ناکام ہو گیا تھا

اس صورت میں بھی اگر مطلوبہ تعداد میں اے ایس پیز کی کمی پوری نہیں ہوئی تو پھر ڈی ایس پی کو ایس ایچ او بنانے کی بھی تجویز ہے۔ پولیس اصلاحات پر کام کرنیوالے ایک اور اہلکار کا کہنا ہے کہ یہ منصوبہ کوئی نئی بات نہیں ہے۔ مشرف دور میں بھی لاہور اور کراچی کے چند تھانوں میں اے ایس پیز کو تعینات کیا گیا تھا مگر یہ منصوبہ کئی وجوہات کی بنا پر چند ماہ میں ہی ناکام ہو گیا تھا۔

متعلقہ خبریں

شہری پر بدترین تشدد کرنیوالے ڈولفن اہلکار معطل

لاہور۔ پولیس کا ہے فرض مدد آپ کی۔ ڈولفن فورس کا قیام سٹریٹ کرائم پر قابو پانے کیلئے…

4 دن
شہری پر بدترین تشدد کرنیوالے ڈولفن اہلکار معطل

موبائل فون پر پابندی لگانے والے آپ کون، آئی جی پنجاب کو…

لاہور۔ کہنے کو پنجاب پولیس دنیا کی چند بڑی فورسز میں سے ایک ہے مگر پچھلے دو تین…

1 ہفتہ
موبائل فون پر پابندی لگانے والے آپ کون، آئی جی پنجاب کو نوٹس

آئندہ پولیس تشدد کی ویڈیو نہ بنے، تھانوں میں موبائل فون کے…

لاہور۔ اے آئی جی آپریشنز نے صوبے بھر میں پولیس اہلکاروں پر موبائل فون استعمال کرنے پر پابندی…

1 ہفتہ
آئندہ پولیس تشدد کی ویڈیو نہ بنے، تھانوں میں موبائل فون کے استعمال پر پابندی عائد

اب راولپنڈی کے تھانوں میں سمارٹ موبائل فون لانا جرم ہو گا

راولپنڈی۔ آج کل پنجاب پولیس کو پولیس گردی کے الزامات کی وجہ سے کڑی تنقید کا سامنا ہے۔…

1 ہفتہ
اب راولپنڈی کے تھانوں میں سمارٹ موبائل فون لانا جرم ہو گا

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے