بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

20-September-2019

کشمیر مسلم امہ کا ایشو نہیں، عرب وزراء خارجہ نے ایسا کوئی بیان نہیں دیا

54 Views 0 1 ہفتہ
کشمیر مسلم امہ کا ایشو نہیں، عرب وزراء خارجہ نے ایسا کوئی بیان نہیں دیا
FACE BOOK
Posted at 12 ستمبر-2019

طارق منیر بٹ

اسلام آباد۔ دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر فیصل نے آج میڈیا کے ساتھ ہفتہ وار میٹنگ کی۔ اس میں میڈیا کے ساتھ مختلف ایشوز شیئرز کئے۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے وزرائے خارجہ گزشتہ ہفتے دورہ پاکستان پر آئے۔ ان کی وزیراعظم، آرمی چیف اور وزیر خارجہ سے کشمیر میں بھارتی بربریت پر بھی بات چیت ہوئی۔

دونوں وزرائے خارجہ نے سول اور ملٹری حکام کو کشمیر پر اپنی حمایت کا یقین دلایا۔ انہوں نے دونوں وزرائے خارجہ کے حوالے سے مختلف افواہوں کی سختی سے تردید کر دی۔ ان کہنا ہے کہ ان افواہوں میں کوئی سچائی نہیں کہ دونوں وزرائے خارجہ نے دورہ پاکستان کے موقع پر حکومت پاکستان سے کہا کہ کشمیر مسلم امہ کا ایشو نہیں۔

Courtesy Express

مقبوضہ وادی کا لاک ڈاؤن کو 40 روز گزر چکے ہیں

ڈاکٹر فیصل کا کہنا ہے کہ دونوں وزرائے خارجہ نے پاکستان کے ساتھ اظہار یک جہتی اور کشمیر ایشو پر اپنی حمایت کا مکمل یقین دلایا تھا۔ اس حوالے سے میڈیا رپورٹس کو خیالی قرار دیتا ہوں۔ ڈاکٹر فیصل نے مزید کہا کہ مقبوضہ وادی کا لاک ڈاؤن کو 40 روز گزر چکے ہیں۔ اس اہم معاملے پر پاکستان کا موقف یہ ہے کہ اسے اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل ہونا چاہئے۔

میڈیا کی جانب سے پوچھے گئے ایک اور سوال کہ صدر ٹرمپ کی جانب سے پاکستان اور بھارت کو دوبارہ ثالثی کی پیش کش پر پاکستان کا ردعمل کیا ہے۔ اس پر ڈاکٹر فیصل نے کہاکہ بھارت اس کیلئے تیار نہیں ہے۔ ہم دوطرفہ بات چیت کیلئے ہمیشہ تیار ہیں اور اس کیلئے ماضی میں بھی کوششیں کیں۔ ہم ہمیشہ کہتے رہے ہیں کہ تمام معاملات بات چیت کے ذریعے حل ہونے چاہئیں۔

مقبوضہ کشمیر کی جدوجہد ایک ایونٹ نہیں۔ جاری عمل ہے

انہوں نے مزید کہا کہ مقبوضہ کشمیر کی جدوجہد ایک ایونٹ نہیں۔ یہ ایک جاری عمل ہے اور یہ مزید آگے بڑھے گا۔ کل وزیراعظم عمران مظفر آباد آمد کے موقع پر عوام کیلئے ایک پالیسی بیان دیں گے۔ ابھی کئی اقدامات زیر غور ہیں۔ جونہی سامنے آئے آپ کو مطلع کروں گا۔ انہوں نے وضاحت کی کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان پس پردہ کوئی بات چیت نہیں چل رہی۔

افغانستان میں امن عمل معطل ہونے کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں کہاکہ پاکستان ہمیشہ پرامن عمل کی حمایت کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ صدر ٹرمپ کے افغانستان کے لئے خصوصی نمائندے کے طالبان رہنماؤں کے ساتھ نو راؤنڈ مذاکرات حتمی مرحلے میں تھے جو اب خطرے میں پڑ گئے۔ انہوں نے مزید کہا کہ فلسطین کی حمایت پہلے بھی کی اور آئندہ بھی کرتے رہیں گے۔

متعلقہ خبریں

لاڑکانہ میں کتے کے کاٹنے سے بچے کی ہلاکت پر کھلاڑی بھی…

لاڑکانہ میں کتے کے کاٹنے کی ویکسینیشن نہ ہونے کے باعث 10 سالہ بچہ سسک سسک کر ماں…

1 دن

پاکستان نے ایک دفعہ پھر مودی کو انکار کر دیا

بھارت نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کے لیے جانے والے بھارتی وزیراعظم نریندر…

1 دن

عمران خان کا تیل تنصیبات پر حملے پر محمد بن سلمان کو…

سعودی تیل کمپنی آرامکو پر میزائل حملے کے بعد وزیراعظم عمران خان نے سعودی ولی عہد محمد بن…

3 دن

خیبرپختونخوا حکومت نے حجاب لازم لینے کا نوٹیفکیشن واپس لے لیا

خیبرپختونخوا کے وزیراعلی محمود خان نے صوبے میں طالبات کے حجاب لازم لینے کا نوٹیفکیشن واپس لے لیا۔…

3 دن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے