بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

23-October-2019

افغان امن معاہدے کیلئے طالبان کی پاکستان آمد

Tariq Avatar
88 Views 0 3 ہفتے
دوسری جانب نیٹو فورسز کے سربراہ جنرل آسٹن بھی ایک روز قبل پاکستان پہنچ چکے ہیں۔ ان کی پاکستان آمد کو بھی بہت اہمیت دی جا رہی ہے۔
State Urdu
Posted at 2 اکتوبر-2019

اسلام آباد۔ افغان طالبان کا پانچ رکنی وفد ملا عبدالغنی برادران کی قیادت میں اسلام آباد پہنچ گیا ہے۔ انہیں حکومت پاکستان نے دورے کی دعوت دی ہے۔ یہ افغان امن عمل کی بحالی کیلئے افغان طالبان کا چوتھا غیر ملکی دورہ ہے۔ قبل ازیں وہ روس، چین اور ایران کا دورہ کر چکے ہیں۔ افغان طالبان کی دورہ پاکستان کے دوران اعلٰی سول و عسکری قیادت سے ملاقاتیں بھی شیڈول ہیں۔

دورہ پاکستان کے دوران ان کی وزیراعظم عمران خان سے بھی ملاقات ہو گی۔ افغان طالبان کی پاکستان آمد سے قبل صدر ٹرمپ کے افغانستان کیلئے خصوصی مشیر زلمے خلیل زاد کی اسلام آباد میں آمد کو بڑی اہمیت دی جا رہی ہے۔ افغان طالبان وفد کی امریکی نمائندے زلمے خلیل زاد سے ملاقات کا بھی امکان ہے۔

Courtesy Facebook

زلمے خلیل زاد پانچ رکنی وفد کے ہمراہ اسلام آباد پہنچ گئے

افغان ترجمان سہیل شاہین نے تصدیق کی ہے ملا عبدالغنی برادران کی قیادت میں افغان وفد کو حکومت پاکستان نے دورے کی دعوت دی ہے۔ دوسری جانب زلمے خلیل زاد پانچ رکنی وفد کے ہمراہ اسلام آباد پہنچ گئے۔ شنید یہی ہے کہ وہ امریکہ طالبان مذاکرات میں ڈیڈلاک کو ختم کرانے کی بھرپور کوشش کریں گے۔ افغان طالبان نے دورہ روس، چین اور ایران کے موقع پر بھی امریکہ سے امن مذاکرات کی بحالی پر زور دیا تھا۔

واضح رہے صدر ٹرمپ نے ایک ایسے وقت میں طالبان کے ساتھ عمل مذاکرات ختم کر دئیے تھے جب دونوں ممالک معاہدے کے قریب پہنچ چکے تھے۔ صدر ٹرمپ نے افغان طالبان وفد اور صدر اشرف غنی سے کیمپ ڈیوڈ میں ملاقات سے عین ایک روز قبل معاہدہ ختم کیا۔

سیاسی تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ امریکی قیادت کا طالبان سے مذاکرات ختم کرنے کی ایک اہم وجہ افغان صدر کا انتخاب بھی تھا۔ امریکہ چاہتا ہے کہ امن مذاکرات دوبارہ بحال ہو جائیں مگر اب طالبان دوبارہ مذاکرات کی میز پر اخلاقی برتری کے ساتھ آئیں گے۔ اب مذاکرات کی بحالی کیلئے وہ کڑی شرائط بھی رکھیں کیونکہ یہ مذاکرات صدر ٹرمپ نے ختم کئے تھے۔

نیٹو فورسز کے سربراہ جنرل آسٹن بھی ایک روز قبل پاکستان پہنچ چکے ہیں

مذاکرات ختم ہونے کے موقع پر بھی طالبان کاکہنا تھاکہ وہ کمزور نہیں بلکہ زیادہ قوت کے ساتھ آگے آئیں گے۔ اب دونوں فریقوں کو میز پر لانے میں حکومت پاکستان نے اہم کردار ادا کیا ہے۔ توقع کی جا رہی ہے کہ عنقریب افغان امن مذاکرات کی بحالی کا عمل شروع ہو جائے گا۔ دوسری جانب نیٹو فورسز کے سربراہ جنرل آسٹن بھی ایک روز قبل پاکستان پہنچ چکے ہیں۔ ان کی پاکستان آمد کو بھی بہت اہمیت دی جا رہی ہے۔

متعلقہ خبریں

جتنی بڑی کرپشن ، اتنی تنگ جیل

وفاقی وزیر قانون فروغ نسیم کہتے ہیں جو 5 کروڑ سے زائد کی کرپشن کرے گا اسے جیل…

11 گھنٹے

کتے نے کاٹا تو سزا کمشنر کو ملے گی

بگڑے ہوئے کتوں کو لگام ڈالنے کے لیے سندھ ہائی کورٹ نے بڑا فیصلہ کر دیا اب آوارہ…

13 گھنٹے

لائن آف کنٹرول پر غیر ملکی سفیروں کے دورے کی تصویری جھلکیاں

پاکستان نے بھارت کے جھوٹ کا پردہ فاش کرنے کے لیے اسلام آباد میں تعینات غیر ملکی سفارت…

15 گھنٹے

بھارتی ہائی کمیشن بھی بھارتی آرمی چیف کے دعوے سے بھاگ گیا

پاک فوج کے ادارے انٹر سروسسز پبلک ریلیشن (آئی ایس پی آر) کے ڈی جی میجر جنرل آصف…

23 گھنٹے

تازہ ترین

مہاتیر محمد کشمیریوں کی حمایت میں ڈٹ گئے

کوالالمپور۔ ملائیشیا کے مرد آہن مہاتیر محمد نے ہندو بزنس مینوں کی جانب سے اربوں ڈالر مالیت کے…

1 گھنٹہ

صارفین پرپھر 2 روپے 97 پیسے فی یونٹ اضافی بجلی بوجھ ڈالنے…

اسلام آباد۔ آئی ایم ایف کا دباؤ یامالی بوجھ سے چھٹکارا پانے کی تدبیریں۔ وفاقی حکومت نے ایک…

2 گھنٹے

نواز شریف کی طبعیت سنبھلنے لگی

نواز شریف کی پلیٹیلیٹس کی تعداد 2 ہزار سے بڑھ کر 20 ہزار تک پہنچ گئی ہے ۔…

11 گھنٹے

جتنی بڑی کرپشن ، اتنی تنگ جیل

وفاقی وزیر قانون فروغ نسیم کہتے ہیں جو 5 کروڑ سے زائد کی کرپشن کرے گا اسے جیل…

11 گھنٹے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے