بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

22-July-2019

گورنر سٹیٹ بنک اور چیئرمین ایف بی آر کی چھٹی

256 Views 0 3 مہینے
نئے چیئرمین ایف بی آر کیلئے وزیراعظم کو تین نام فضل یزدانی،جاوید غنی اور رشید شیخ بھجوائے گئے ہیں جن پرغور ہو رہا ہے
Posted at 4 مئی-2019

اسلام آباد۔ ملکی معیشت آج جس مشکل ترین دور سے گزر رہی ہے۔ اس کی وجہ سے کئی اہم عہدوں پر تعینات شخصیات کیلئے اپنے عہدوں پر براجمان رہنا مشکل ہو گیا ہے۔ ایم آئی ایف کے پروگرام میں جانے کے بعد عالمی ادارے کی طرف سے 6 سو ارب کے مزید ٹیکس لگانے کا مطالبہ جان جوکھوں میں ڈالنے کا مرحلہ طے ہونا ابھی باقی ہے۔

کئی سینئر بیوروکریٹس کی طرف سے وزیراعظم عمران خان کو اپنے معاشی ایجنڈے کوعملی جامہ پہنانے میں مشکلات کا سامنا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ وزیراعظم کی معاشی ٹیم میں مزید تبدیلیاں کر دی گئی ہیں۔ اس مرحلے پر پہلے اسد عمر کو وزیر خزانہ کے عہدے سے ہٹایا گیا۔ اب گورنر سٹیٹ بنک طارق باجوہ اور چیئرمین فیڈرل بورڈ آف ریونیو جہانزیب خان کو بھیعہدوں سے ہٹا دیا گیا ہے۔ ب

طارق باجوہ سے بھی استعفٰی طلب کیا گیا تھا جو حکومتی ایجنڈے میں رکاوٹ بن رہے تھے

اخبر ذرائع کا کہنا ہے کہ چیئرمین فیڈرل بورڈ آف ریونیو جہانزیب خان کو نئی ایمنسٹی سکیم، ریونیو شارٹ فال اور ایف بی آر میں اصلاحات نہ کرنے پر ہٹایا گیا جبکہ گورنر سٹیٹ بنک طارق باجوہ سے بھی استعفٰی طلب کیا گیا تھا جو حکومتی ایجنڈے میں رکاوٹ بن رہے تھے۔ انہوں نے وزارت خزانہ کے توسط سے وزیراعظم سیکرٹریٹ کو اپنا استعفٰی بھجوا دیا حالانکہ گورنر سٹیٹ بنک ایک آئینی عہدہ ہے۔

جہانزیب خان کو نئی ایمنسٹی سکیم، ریونیو شارٹ فال اور ایف بی آر میں اصلاحات نہ کرنے پر ہٹایا گیا

اس کی مدت تین سال ہوتی ہے۔ اسے ہٹانے کیلئے سپریم جوڈیشل کونسل میں وفاقی حکومت کو کیس بھجوانا پڑتا ہے جس میں اسے عہدے سے ہٹانے کی وجوہات بتانا پڑتی ہیں۔ بہرحال اب حکومت کیلئے میدان صاف ہے۔ اب وزیراعظم عمران خان کے پاس بھی کوئی آپشن نہیں بچا۔ آئندہ انہیں کوئی بھی ناکامی دوسروں پر ڈالنے کے بجائے خود لینا ہو گی۔

بجلی، گیس اور پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں پچھلے آٹھ ماہ کے دوران ایک سے زائد مرتبہ بڑھائی گئی ہیں۔ ملک میں مہنگائی کا طوفان قابو سے باہر ہو گیا ہے۔ ابھی تک وزیراعظم میٹھا میٹھا ہپ ہپ اور کڑوا کڑوا تھوتھو والی پالیسی پر گامزن ہیں۔ سیاسی تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ اگر وزیراعظم نے بجٹ 2019ء میں عوام کو ریلیف نہ دیا تو ان کی مشکلات بہت زیادہ بڑھ جائیں گی۔

نئے چیئرمین ایف بی آر کیلئے تین نام فضل یزدانی،جاوید غنی اور رشید شیخ پرغور ہو رہا ہے

نئے چیئرمین ایف بی آر کیلئے وزیراعظم کو تین نام فضل یزدانی،جاوید غنی اور رشید شیخ بھجوائے گئے ہیں جن پرغور ہو رہا ہے۔ باخبر ذرائع کا کہنا ہے کہ گورنر سٹیٹ بنک اور چیئرمین فیڈرل بورڈ آف ریونیو جہانزیب کو ہٹانے کا اصولی فیصلہ سابق وزیر خزانہ اسد عمر کے دور میں ہو گیا تھا۔ اس میں تاخیر آئی ایم ایف سے بیل آؤٹ پیکیج ریونیو معاملات اور اقتصادی صورتحال کو درپیش چیلنجز کو مدنظر رکھ کر تاخیر کی گئی۔

اب نئے مشیرخزانہ عبدالحفیظ شیخ بھی اپنی نئی معاشی ٹیم بنانے کیلئے ان اہم عہدوں پر اپنے پسندیدہ بندوں کو لانا چاہتے ہیں۔ دوسری جانب وزیراعظم عمران خان بھی جہانزیب خان اور طارق باجوہ کی کارکردگی سے خوش نہیں تھے۔ چنانچہ وزیراعظم نے حفیظ شیخ سے مشاورت کے بعد یہ بڑا اقدام اٹھایا۔

متعلقہ خبریں

طالبان کو جنگ بندی پر راضی کرنے کیلئے…

اسلام آباد۔ اگلے سال امریکہ کا صدارتی انتخاب ہونے جا رہاہے۔ صدر ٹرمپ دوسری ٹرم کیلئے امریکی صدر…

6 گھنٹے
طالبان کو جنگ بندی پر راضی کرنے کیلئے امریکہ پاکستان کے کردار کا خواہش مند

ایف بی آر کو جولائی کے پہلے تین…

کراچی۔ آئی ایم ایف کی منظوری اور وفاقی بجٹ کی منظوری کے بعد ہر پاکستان کو ٹیکس نیٹ…

7 گھنٹے
ایف بی آر کو جولائی کے پہلے تین ہفتوں میں 181 ارب روپے کی ٹیکس وصولیاں

مون سون بارشوں کی وجہ سے دریاؤں کے…

مظفر آباد۔ مون سون کا آغاز ہوتے ہی آزاد کشمیر کے دریاؤں میں ابال آنا شروع ہو جاتا…

7 گھنٹے
مون سون بارشوں کی وجہ سے دریاؤں کے کنارے رہنے والے کشمیری رہائشیوں کیلئے وا رننگ

چیئرمین سینیٹ نہ بنایا تھا اور نہ اب…

اسلام آباد۔ سابق صدر آصف زرداری کے بارے میں مشہور ہے کہ وہ زبان کے پکے ہیں۔ شاید…

8 گھنٹے
چیئرمین سینیٹ نہ بنایا تھا اور نہ اب اتار رہے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے