بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

22-July-2019

کابینہ کی منظوری سے پہلے ہی پٹرولیم مصنوعات میں اضافے کا نوٹیفکیشن جاری

236 Views 0 3 مہینے
کابینہ کی منظوری سے پہلے ہی پٹرولیم مصنوعات میں اضافے کا نوٹیفکیشن جاری
Posted at 5 مئی-2019

لاہور۔ سابق حکمران جماعت مسلم لیگ ن پٹرولیم مصنوعات میں معمولی اضافہ کرتی تو وزیراعظم عمران بڑی دہائیاں دیتے تھے۔ اسے غریب عوام کیساتھ سخت زیادتی قرار دیتے مگراب پی ٹی آئی حکومت نے نو ماہ کے دوران چوتھی مرتبہ پٹرولیم مصنوعات میں اضافہ کیا ہے۔

یوں پٹرول کا ہدف ایک مرتبہ پھر 100 کا ہندسہ پار کر گیا ہے۔ معاشی ماہرین کا کہنا ہے کہ پٹرولیم مصنوعات میں اضافے کے بعد ملک میں مہنگائی کا نیا طوفان آنے کو تیار کھڑا ہے۔ پٹرول کی قیمت میں موجودہ 9 روپے 35 پیسے اضافہ اب تک کا سب سے بڑا اضافہ ہے۔

موجودہ 9 روپے 35 پیسے اب تک کا سب سے بڑا اضافہ ہے

اس اضافے کے بعد پٹرول 108 روپے اکیتس پیسے لٹر ہو گیا ہے۔ ڈیزل چار روپے نواسی پیسے، مٹی کا تیل سات روپے چھیالیس پیسے فی لٹر مہنگا ہو گیا ہے۔ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے بعد مہنگائی کا نیا سونامی آ گیا ہے۔ آئی ایم ایف کی پیشگی شرائط یا ریونیو اکٹھے کرنے کی عجلت میں کابینہ کی منظوری سے پہلے ہی قیمتوں میں اضافہ کر دیا گیا۔

حکومت کی جانب سے عوام کیلئے صرف دلاسے رہ گئے ہیں

پی ٹی آئی حکومت کی جانب سے عوام کیلئے صرف دلاسے رہ گئے ہیں۔ پٹرول پر سیلز ٹیکس کی شرح دو فیصد سے بڑھا کر بارہ فیصد کر دی گئی۔ اب عوام کو ایک سو آٹھ روپے 31 پیسے پٹرول فی لٹر دستیاب ہو گا۔ ڈیزل کی نئی قیمت 122 روپے 32 پیسے فی لٹر، لائٹ ڈیزل کی نئی قیمت 86 روپے 94 پیسے مقرر کی گئی ہے۔

مٹی کا تیل 96 روپے 77 پیسے فی لٹر ہو گا۔ معیشت دانوں کا کہنا ہے کہ رواں ماہ آئی ایم ایف پروگرام میں جانے کے بعد بجلی کی قیمتوں میں بھی 25 فیصد اضافہ متوقع ہے۔

متعلقہ خبریں

طالبان کو جنگ بندی پر راضی کرنے کیلئے…

اسلام آباد۔ اگلے سال امریکہ کا صدارتی انتخاب ہونے جا رہاہے۔ صدر ٹرمپ دوسری ٹرم کیلئے امریکی صدر…

6 گھنٹے
طالبان کو جنگ بندی پر راضی کرنے کیلئے امریکہ پاکستان کے کردار کا خواہش مند

ایف بی آر کو جولائی کے پہلے تین…

کراچی۔ آئی ایم ایف کی منظوری اور وفاقی بجٹ کی منظوری کے بعد ہر پاکستان کو ٹیکس نیٹ…

7 گھنٹے
ایف بی آر کو جولائی کے پہلے تین ہفتوں میں 181 ارب روپے کی ٹیکس وصولیاں

مون سون بارشوں کی وجہ سے دریاؤں کے…

مظفر آباد۔ مون سون کا آغاز ہوتے ہی آزاد کشمیر کے دریاؤں میں ابال آنا شروع ہو جاتا…

8 گھنٹے
مون سون بارشوں کی وجہ سے دریاؤں کے کنارے رہنے والے کشمیری رہائشیوں کیلئے وا رننگ

چیئرمین سینیٹ نہ بنایا تھا اور نہ اب…

اسلام آباد۔ سابق صدر آصف زرداری کے بارے میں مشہور ہے کہ وہ زبان کے پکے ہیں۔ شاید…

8 گھنٹے
چیئرمین سینیٹ نہ بنایا تھا اور نہ اب اتار رہے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے