بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

22-July-2019

سٹیل مل کی نجکاری کیخلاف ملازمین سراپا احتجاج

260 Views 0 3 مہینے
سٹیل مل کی نجکاری کیخلاف ملازمین سراپا احتجاج
Posted at 6 مئی-2019

کراچی۔ پاکستانی معیشت پر بوجھ بھاری بھر کم سفید ہاتھیوں میں ایک ادارہ پاکستان سٹیل مل بھی ہے جو روس نے ذوالفقار علی بھٹو شہید کے دور میں پاکستانی قوم کو ایک تحفہ دیا ہے تاکہ ملکی سٹیل کی ضروریات پوری کی جائے۔ ابتدا میں یہ انتہائی منافع بخش ادارہ تھا۔ پرویز مشرف دور میں بھی منافع پر تھے مگر سیاسی حکومتوں کے آتے ہی قومی خزانے پر بوجھ بننے لگا۔

اب یہ اربوں روپے کا مقروض ہے۔ سونے پہ سہاگہ پیداواری یونٹ بھی اتنی پیداوار نہیں کر رہے کہ یہ ادارہ اپنا بوجھ خود اٹھا سکے۔ سابق دور میں اس کی نجکاری کا فیصلہ بھی کیا گیا تھا مگر سابق چیف جسٹس افتخار چودھری آڑے آ گئے۔ ہر سیاسی حکومت نے اپنے دور حکومت میں اس میں سیاسی بنیادوں پر تقرری کیں جو اس پر مزید بوجھ بنتی چلی گئیں۔

نیشنل ہائی وے پر سٹیل مل کی نجکاری کیخلاف زبردست احتجاج کیا

سٹیل مل کے ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن کیلئے حکومت کو سپیلمنٹری گرانٹ دیکر چلانا پڑتا ہے۔ حکومت کے پاس سوائے اس کہ کوئی چارہ نہیں کہ اسکی نجکاری کی جائے مگر سٹیل ملز ملازمین اس کی راہ میں رکاوٹ بن گئے ہیں۔ کراچی نیشنل ہائی وے پر سٹیل مل کی نجکاری کیخلاف زبردست احتجاج کیا اور علامتی ہڑتال ریکارڈ کرانے کے بعد نیشنل ہائی وے پر ٹریفک بحال ہوئی۔

سالانہ نقصانات 93 روپے سے بڑھ کر 435 ارب سالانہ تک پہنچ گئے

واضح رہے پی ٹی آئی حکومت نے آئی ایم ایف کی مشاورت سے نجکاری کیلئے پیش کئے جانیوالے قومی اداروں کی فہرست کو 10 مئی کے فوری بعد دوبارہ ترتیب دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ پبلک سیکٹر کے سالانہ نقصانات 93 روپے سے بڑھ کر 435 ارب سالانہ تک پہنچ گئے ہیں۔

ان 193 قومی اداروں میں سے 43 کو بند، 48 کی پہلے مرحلے میں نج کاری اور باقی آئندہ 3 سال کے دوران نج کاری کر کے انہیں پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت چلانے یا ان میں مرحلہ واری نج کاری کر کے قومی خزانے پر ان کے بوجھ کو کم سے کم رکھنے کی نئی حکمت عملی بنائی جائے گی۔

متعلقہ خبریں

طالبان کو جنگ بندی پر راضی کرنے کیلئے…

اسلام آباد۔ اگلے سال امریکہ کا صدارتی انتخاب ہونے جا رہاہے۔ صدر ٹرمپ دوسری ٹرم کیلئے امریکی صدر…

6 گھنٹے
طالبان کو جنگ بندی پر راضی کرنے کیلئے امریکہ پاکستان کے کردار کا خواہش مند

ایف بی آر کو جولائی کے پہلے تین…

کراچی۔ آئی ایم ایف کی منظوری اور وفاقی بجٹ کی منظوری کے بعد ہر پاکستان کو ٹیکس نیٹ…

7 گھنٹے
ایف بی آر کو جولائی کے پہلے تین ہفتوں میں 181 ارب روپے کی ٹیکس وصولیاں

مون سون بارشوں کی وجہ سے دریاؤں کے…

مظفر آباد۔ مون سون کا آغاز ہوتے ہی آزاد کشمیر کے دریاؤں میں ابال آنا شروع ہو جاتا…

7 گھنٹے
مون سون بارشوں کی وجہ سے دریاؤں کے کنارے رہنے والے کشمیری رہائشیوں کیلئے وا رننگ

چیئرمین سینیٹ نہ بنایا تھا اور نہ اب…

اسلام آباد۔ سابق صدر آصف زرداری کے بارے میں مشہور ہے کہ وہ زبان کے پکے ہیں۔ شاید…

8 گھنٹے
چیئرمین سینیٹ نہ بنایا تھا اور نہ اب اتار رہے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے