بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

23-October-2019

کرنل قذافی کو کیوں قتل کیا گیا، خفیہ حقائق سامنے آ گئے

Tariq Avatar
72 Views 0 2 ہفتے
Mirror
Posted at 8 اکتوبر-2019

لیبیا کے سابق آمر کرنل قذافی کو جب قتل کیا گیا تو ان کے لبوں پر یہ الفاظ تھے ”میں نے تمہارا کیا بگاڑا ہے“؟ حال ہی میں معمر قذافی کی پرانی خفیہ ای میلز سامنے آئی ہیں جس سے اندازہ ہوتا ہے کہ انہیں محض اس لئے قتل کیا گیا کیونکہ فرانس افریقی ممالک پر اپنی مالی دھاک بٹھانا چاہتا تھا۔

سابق امریکی وزیر خارجہ ہیلری کلٹن کی 2016ء میں سامنے آنیوالی خفیہ ای میلز محکمہ خارجہ نے جاری کی ہیں۔ ان ای میلز کی تعداد 3 ہزار ہے۔ ان ایل میلز کو پڑھ کر معلوم ہوتا ہے کہ مغربی ممالک نے نیٹو کو معمر قذافی کی حکومت کا تختہ الٹنے کیلئے استعمال کیا۔

Courtesy Twitter

قذافی کا تختہ الٹنا عوامی بھلائی کا اقدام ہرگز نہیں تھا

نیٹو کا معمر قذافی کا تختہ الٹنا عوامی بھلائی کا اقدام ہرگز نہیں تھا بلکہ قذافی کو سونے کی بنیاد پر افریقی خطے میں فرانسیسی اور یورپی کرنسی کی طرح مقامی مشترکہ کرنسی متعارف کرانے سے روکنا تھا۔ قذافی کے منصوبے کی کامیابی کی صورت میں افریقی ممالک میں مغربی بنکاری کی اجارہ داری ختم ہونے کا خدشہ تھا۔

بنیادی مقصد لیبیا کے تیل پر قبضہ حاصل کرنا تھا

اپریل 2011ء میں ہیلری کلنٹن کو ان کے مشیر کی جانب سے بھجوائی جانیوالی ای میل میں میں انہیں واضح طور پر مغربی ممالک کے خطرناک ارادوں سے آگاہ کیا گیا تھا۔ ای میل میں واضح تھا کہ فرانس کی قیادت میں نیٹو افواج کی لیبیا میں کی جانیوالی کارروائی کا بنیادی مقصد لیبیا کے تیل پر قبضہ حاصل کرنا تھا اور اس کے ساتھ قذافی کے اس دیرینہ منصوبے کو ناکام بنانا تھا جس کے تحت وہ افریقہ میں فرانس کے زیر اثر علاقوں میں اپنا قبضہ حاصل کرنا چاہتا تھا۔

خفیہ ای میلز میں سابق فرنچ صدر سرکوزی کو بھی لیبیا پر حملے کرنے والوں میں سرفہرست دکھایا گیا ہے۔ ان ای میلز میں لیبیا پر قبضہ کیلئے پانچ بنیادی مقصد کو مدنظر رکھا گیا لیبا کا تیل حاصل کرنا، خطے میں فرانس کا اثرورسوخ برقرار رکھنا، ملک میں داخلی سطح پر سرکوزی کی ساکھ بہتر کرنا، فرنچ، عسکری قیادت کو اجاگر کرنا اور قذافی کے افریقی خطے میں اثرورسوخ کو کم کرنا شامل تھا۔

قذافی کے دیرینہ ساتھی اور ترجمان موسیٰ ابراہیم نے روسی ٹی وی کے ساتھ ایک انٹرویو میں اس بات کا انکشاف کیا تھا کہ معمر قذافی کو اس لئے ہٹایا گیا کیونکہ وہ افریقہ سے غیر ملکیوں کو نکالنا چاہتے تھے۔ نیٹو کی لیبیا پر بمباری کی وجہ سے وہ تمام گروپس کھل کر سامنے آ گئے جنہیں قابو میں رکھا گیا تھا۔ یوں لیبیا کی عوام کا ایک دیرینہ خواب چکنا چور کر دیا گیا۔ یہ خواب دہائیوں کی نوآبادیاتی اور اس کے نظام کو دیکھ کر اور تجربات سے مرتب کیا گیا تھا۔

متعلقہ خبریں

جھڑپیں انتخابات سے پہلے ہی کیوں ہوتی ہیں۔ کانگریسی رہنما

نئی دہلی۔ بھارت کی دو ریاستوں ہریانہ اور مہاراشٹر میں انتخابات سے پہلے مودی سرکار نے پاکستان مخالف…

2 دن

بی جے پی کی انتخابی ریلیوں میں پاکستان مخالف تقاریر مسترد

اسلام آباد۔ ترجمان دفتر ڈاکٹر فیصل کا کہنا ہے کہ سیاسی مفادات کے حصول کیلئے پاکسستان کا نام…

2 دن

ایل او سی پر بلااشتعال فائرنگ میں پاک فوج کا جوان اور…

آزاد کشمیر۔ لائن آف کنٹرول پر فوج کی بلااشتعال فائرنگ کے واقعات تسلسل سے جاری ہیں۔ بھارتی ڈپٹی…

3 دن

مقابلہ حسن میں حسینہ کا مودی کو کرارا جواب

ناگالینڈ۔ شورش زدہ انڈین ریاست ناگالینڈ یوں توکئی مسائل کا شکار ہے۔ یہاں آزادی کی تحریک بھی چل…

3 دن

تازہ ترین

مہاتیر محمد کشمیریوں کی حمایت میں ڈٹ گئے

کوالالمپور۔ ملائیشیا کے مرد آہن مہاتیر محمد نے ہندو بزنس مینوں کی جانب سے اربوں ڈالر مالیت کے…

1 گھنٹہ

صارفین پرپھر 2 روپے 97 پیسے فی یونٹ اضافی بجلی بوجھ ڈالنے…

اسلام آباد۔ آئی ایم ایف کا دباؤ یامالی بوجھ سے چھٹکارا پانے کی تدبیریں۔ وفاقی حکومت نے ایک…

2 گھنٹے

نواز شریف کی طبعیت سنبھلنے لگی

نواز شریف کی پلیٹیلیٹس کی تعداد 2 ہزار سے بڑھ کر 20 ہزار تک پہنچ گئی ہے ۔…

11 گھنٹے

جتنی بڑی کرپشن ، اتنی تنگ جیل

وفاقی وزیر قانون فروغ نسیم کہتے ہیں جو 5 کروڑ سے زائد کی کرپشن کرے گا اسے جیل…

11 گھنٹے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے