بِسمِ اللہِ الرَّحمٰنِ الرَّحِيم

22-July-2019

امریکی فوجی خواتین اہلکاروں پر جنسی حملوں میں اضافہ

273 Views 0 3 مہینے
Posted at 3 مئی-2019

واشنگٹن۔ حوا کی بیٹیوں خواہ کسی بھی مذہب یا ملک سے تعلق رکھتی ہوں۔ ہر دور میں اسے مردوں کی ہوس اور تشدد کا نشانہ بننا پڑا ہے۔ دنیا کے مہذب اور ترقی ملک امریکہ کی خواتین فوجی اہلکاروں کو بھی استثنٰی حاصل نہیں ہے حالانکہ انہیں امریکی عوام بہت زیادہ طاقتور سمجھتے ہیں۔

امریکی خواتین فوجی اہلکاروں کے جنسی تشدد کے بڑھتے ہوئے واقعات پر امریکی عوام میں بھی تشویش پائی جاتی ہے۔ اس شرمناک اضافے میں کمی لانے کیلئے کئی سروے بھی کرائے گئے ہیں۔ تازہ سروے میں بتایا گیا ہے کہ گزشتہ برس 20 ہزار پانچ امریکی فوجی خواتین اہلکاروں کے ساتھ جنسی تشدد کے واقعات رپورٹ ہوئے۔

زیادہ شکار 17 سے 24 سال کی نئی بھرتی ہونیوالی خواتین فوجی اہلکار تھیں

ان حملوں کا نشانہ بننے والی زیادہ تر شکار 17 سے 24 سال کی نئی بھرتی ہونیوالی خواتین فوجی اہلکار تھیں۔ امریکی وزارت دفاع نے فوج کو ہدایات جاری کر دی ہیں کہ جنسی ہراس کو جرائم کی فہرست میں شامل کیا جائے۔ سروے میں مزید بتایا گیا ہے کہ جنسی حملوں کی 85 فیصد متاثرین خواتین حملہ آوروں سی آشنا تھیں۔

زیادہ تر خواتین فوجی اہلکار اپنے اعلٰی افسران کی ہوس کا نشانہ بنیں۔ واضح رہے افغانستان میں تعینات امریکی خواتین فوجی اہلکاروں نے اپنے اعلٰی افسران کیخلاف جنسی تشدد کے الزامات عائد کئے تھے۔

متعلقہ خبریں

وزیراعظم عمران خان کی پانچ روزہ دورے پر…

اسلام آباد۔ ایک دور میں پاکستان امریکہ کا اہم ترین اتحادی تھا اور دہشت گردی کیخلاف عالمی جنگ…

2 دن
وزیراعظم عمران خان پانچ کی پانچ روزہ دورے پر امریکہ روانگی

قمر جاوید باجوہ نے دفاعی صنعت کیلئے پبلک…

راولپنڈی۔ ملکی ترقی کیلئے سد ضروری ہے کہ حکومت اور تمام ادارے ایک پیج پر ہوں۔ خوش قسمتی…

3 دن
قمر جاوید باجوہ نے دفاعی صنعت کیلئے پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کو ضروری کیوں قرار دے دیا

وزیراعظم اورآرمی چیف ملاقات میں کن امور پر…

اسلام آباد۔ سابق دور حکومت میں چیف ایگزیکٹو اور اداروں کے مابین ہم آہنگی نہ ہونے کا ملک…

4 دن

قبائلی اضلاع کے انتخابات میں فوج صرف حساس…

اسلام آباد۔بیس جولائی کو قبائلی علاقوں کی 16صوبائی اسمبلی کی نشستوں پر انتخابات ہونے جا رہے ہیں۔ قبل…

2 ہفتے
قبائلی اضلاع کے انتخابات میں فوج صرف حساس پولنگ سٹیشنز کے اندر تعینات ہو گی

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے